کپواڑہ میں انتہا پسندوں سے تصادم میں فوج و پولس کے5جوان شہید،پانچ دہشت گردوں کی لاشیں ملیں

سری نگر: جموں و کشمیر کے کپواڑہ ضلع کے گھنے جنگلات میں سلامتی دستوں اور انتہا پسندوں کے درمیان خونریز تصادم میں تین فوجی اور جموں و کشمیر پولس کے دو اہلکار شہید ہو گئے۔
یہ جھڑپ اسی علاقہ میں منگل کے روزہونے والے اس تصادم کے دوسرے روز ، جس میں چار دہشت گرد مارے گئے تھے ہوئی ہے۔پولس ترجمان کے مطابق ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر سے12کلومیٹر کی دوری پر آرام پورہ علاقہ میں یہ تصادم منگل کی رات اس وقت ہوا تھا جب ایک فوجی گشتی پارٹی پر انتہا پسندوں کی فائرنگ کے بعدسلامتی دستوں نے سرعت کے ساتھ جوابی کارروائی کرتے ہوئے حملہ آور انتہا پسندوں کی تلاش شروع کر دی۔ تبھی سے جاری اس تصادم کے دوران پانچ دہشت گرد بھی مارے گئے۔
اگرچہ فوج نے ابھی اپنے جوانوں کی شہادت کا اعلان نہیں کیا لیکن جموں و کشمیر پولس نے اس تصادم میں شہید ہونے والے اپنے جوانوں کی شناخت محمد یوسف اور دیپک تھیسو کے طور پر کی ہے۔جائے تصادم سے بھاری مقدار می اسلحہ بارود بھی برآمد ہوا۔ جس میں اے کے 47رائفلیں، گرینیڈس بھی شامل ہیں۔

Title: fresh firing between security forces militants in kupwara | In Category: کشمیر  ( kashmir )

Leave a Reply