نابالغوں سے جنسی زیادتی کرنے والوں کو پھانسی دینے کا بل پیش کرنے کے لیے خصوصی اسمبلی اجلاس بلایا جائے: فاروق عبداللہ

سری نگر: حزب اختلاف نیشنل کانفرنس کے صدر فاروق عبداللہ نے نابالغوں سے جنسی زیادتی کرنے والوں کو سزائے موت دینے والا بل لانے کے لیے جموں و کشمیر قانون ساز اسمبلی کا خصوصی طلب کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔
فاروق عبداللہ کا یہ مطالبہ جموں و کشمیر کے کٹھوعہ میں ایک8سالہ بچی کے ریپ و قتل کی ملک گیر پیمانے پر مذمت کے پس منظر میں کیا گیا ہے۔انہوں نے میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اس قسم کی وارداتوںمیں ملزموں کا پھانسی دی جانی چاہئے۔عبداللہ نے کہا کٹھوعہ میں درندگی کا شکار ہونے والی یہ8سالہ بچی میری بیٹی جیسی ہے۔
خدا کا شکر ہے کہ آج قوم بیدار ہو گئی اور اس نے اس واردات کو بہت سنجیدگی سے لیا ہے۔مجھے امید ہے کہ عدل سے کام لیا جائے گا اور ہم اسمبلی میں جلد ہی بل لائیں گے جس میں تجویز کیا جائے گاکہ جہاں کہیں بھی ایسی واردات ہو گی اس کے مجرم کو پھانسی دی جائے گی۔
جمو و کشمیر کی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے بھی کہا کہ ان کی حکومت ایک نیا قانون بنائے گی جس میں نابالغوں کی عصمت دری کرنے والوں کے سزائے موت لازمی قرار دی جائے گی۔

Title: farooq abdullah wants bill to award death penalty for raping minors | In Category: کشمیر  ( kashmir )

Leave a Reply