این آئی اے کے چھاپوں سے حکومت آخر کیا ثابت کرنا چاہتی ہے: فاروق عبداللہ

سری نگر: نیشنل کانفرنس کے صدر و رکن پارلیمان ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے وادی کشمیر میں قومی تحقیقاتی ایجنسی (این آئی اے) کی طرف سے علیحدگی پسندوں اور تجارت پیشہ افراد کے گھروں پر جاری چھاپہ مار کاروائیوں پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ میں قومی جانچ ایجنسی اور حکومت ہند سے کہنا چاہتا ہوں کہ وہ کتنا بھی ظلم کرے یہاں کوئی اپنا ایمان بیچنے کے لئے تیار نہیں ہے۔ انہوں نے وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ کے 10 ستمبر کے مجوزہ دورہ کشمیر پر کہا کہ انہیں اس دورے کے مثبت نتائج سامنے آنے کی کوئی توقع نہیں ہے۔ انہوں نے صحافی گوری لنکیش کے قتل کو المناک واقعہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ملک میں فرقہ وارانہ رجحانات ابھر رہے ہیں۔ فاروق عبداللہ نے جمعہ کو نیشنل کانفرنس کے بانی مرحوم شیخ محمد عبداللہ کے35 ویں یوم وصال کے سلسلے میں سری نگر کے مضافاتی علاقہ نسیم باغ میں واقع ا±ن کے مقبرہ پرمنعقدہ ایک جلسہ عام کے حاشئے پر نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے کہا ’میں تب این آئی اے کی چھاپہ مار کاروائیوں کو صحیح مانوں گا جب یہ جانچ ایجنسی کچھ سامنے لیکر آئے گی۔ اگر یہ صرف ان (علیحدگی پسندوں) کو تنگ کرنے کی کوشش کررہے ہیں ، کہ وہ اِن کے سامنے جھک جائیں گے تو میں این آئی اے اور حکومت ہندوستان سے کہنا چاہتا ہوں کہ وہ کتنا بھی ظلم کرے یہاں کوئی اپنا ایمان بیچنے کے لئے تیار نہیں ہے‘۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Farooq abdullah questions centres intention on nia raids in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply