سری نگرکئی مقامات پر پھر سخت کرفیو نافذ

سری نگر: جموں و کشمیر کے دارالحکومت سری نگر کے ڈاون ٹاون، شہرخاص اور سیول لائنز کے کچھ حصوں میں بدھ کی علی الصبح سخت ترین کرفیو نافذ کردیا گیا جہاں منگل کو گذشتہ 17 دنوں سے جاری کرفیو کو ہٹائے جانے کے بعد احتجاجی مظاہرین اور سیکورٹی فورسز کے مابین شدید جھڑپیں بھڑک اٹھیں جن میں کم از کم ڈیڑھ درجن احتجاجی نوجوان زخمی ہوگئے۔
دوسری جانب جنوبی کشمیر کے چار اضلاع اننت ناگ، پلوامہ، شوپیان اور کولگام میں بدھ کو مسلسل انیسویں روز بھی کرفیو کا نفاذ جاری رہا۔ وادی کے دیگر پانچ اضلاع شمالی کشمیر کے کپواڑہ، بارہمولہ اور بانڈی پورہ اور وسطی کشمیر کے گاندربل اور بڈگام سے اگرچہ کرفیو ہٹالیا گیا ہے، تاہم اِن اضلاع میں دفعہ 144 سی آر پی سی کے تحت چار یا اس سے زیادہ افراد کے ایک جمع ہونے پر پابندی عائد کر رکھی گئی ہے۔
اِن اضلاع میں کسی بھی طرح کے احتجاجی مظاہروں کو روکنے کے لئے سیکورٹی فورسز اور ریاستی پولیس کے اہلکاروں کی ایک بڑی تعداد تعینات رکھی گئی ہے۔ علیحدگی پسند قیادت کی اپیل پر وادی بھر میں آج مسلسل انیسویں روز بھی ہڑتال جاری رہی۔ تاہم وادی میں بدھ کی علی الصباح شروع ہونے والی موسلادھار بارشوں کے نتیجے میں احتجاجی مظاہروں کی شدت میں کمی واقع ہوگئی ہے۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Curfew reimposed again in downtown srinagar and shehar e khas in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply