سری نگر۔ مظفرآباد تجارتی راستہ دو ہفتے بند رہنے کے بعد دوبارہ کھول دیا گیا

سری نگر: لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے آر پار جموں وکشمیر اور پاکستان زیر قبضہ کشمیر کے درمیان سری نگر۔ مظفرآباد روڈکے ذریعے ہونے والی تجارت دو ہفتوں تک معطل رہنے کے بعد منگل کے روز بحال ہوگئی۔ سری نگر مظفرآباد تجارت 21 جولائی کو مظفرآباد سے آنے والی ایک ٹرک سے ہیروئین برآمد ہونے کے بعد 25 جولائی کو معطل کردی گئی تھی۔ سرکاری ذرائع نے یو این آئی کو بتایا ’منگل کو دوپہر تک چار مال بردار ٹرکیں یہاں سے پاکستان زیر قبضہ کشمیر کی طرف روانہ ہوئیں۔ تاہم دوپہر تک وہاں (چکوٹھی) سے کوئی مال بردار گاڑی یہاں نہیں آئی‘۔
انہوں نے تجارت کی دو ہفتوں تک معطلی کے بارے میں بتایا ’سرحد پار مظفر آباد کی انتظامیہ نے 25 جولائی کو ہمیں ایک مکتوب بھیجا جس میں آر پار تجارت کو ایک ہفتے تک معطل رکھنے کی بات کہی گئی تھی ‘۔ انہوں نے بتایا ’مظفرآباد کی انتظامیہ نے مکتوب میں تجارت کی معطلی کی کوئی وجہ ظاہر نہیں کی تھی‘۔ ذرائع نے بتایا کہ مظفرآباد انتظامیہ کی طرف سے آر پار تجارت کی معطلی کا فیصلہ وہاں سے آنے والے ٹرک سے ساڑھے 66 کلو گرام ہیروئن کی برآمدگی کے تناظر میں سامنے آیا تھا۔ انہوں نے بتایا ’ 21 جولائی کو جس ٹرک سے ہیروئین برآمد ہوئی تھی، کے ڈرائیور سید یوسف ولد علی اکبر کو حراست میں لیا گیا تھا‘۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Cross loc trade on srinagar muzaffarabad road resumes in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply