جموں و کشمیر ہائی کورٹ نے ایک نوجوان کی پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت گرفتاری کالعدم قرار دے دی

سری نگر: جموں و کشمیر ہائی کورٹ نے شو پیان کے ایک نوجوان زبیر احمد طورے کی عوامی تحفظ قانون کے تحت گرفتاری کو کالعدم قرار دیتے ہوئے اس کی رہائی کے حکم صادر کر دیا۔بونگم شوپیان کے رہائشی 25سالہ زبیر کو ہند مخالف سرگرمیوں میں مبینہ طور پر ملوث قرار دے کر اس کو پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت گذشتہ سال نومبر میں جموںکی اودھم پور جیل میں ڈال دیا گیا تھا۔
جسٹس مظفر حسین اطہر نے ، جنہوں نے اس سے قبل زبیر کے وکیل بشیر احمد تاک کی عذر داری پر فیصلہ محفوظ کر لیا تھا، اس کی پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت گرفتاری غلط بتا کر اس کی فوری رہائی کے احکام جاری کر دیے۔اس قانون کے تحت ایک ضلع مجسٹریٹ کو بھی یہ اختیار حاصل ہے کہ کوہ کسی بھی ایسے ملزم کو جو ریاست کی سلامتی کے لیے خطرہ ہو مقدمہ چلائے بغیر دو سال تک جیل میں رکھا جا سکتا ہے۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Court quashes psa detention of south kashmir youth in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply