کرفیو کی خلاف ورزی کرنے والے مظاہرین اور سیکورٹی فورسز میں تصادم، متعدد زخمی

سری نگر: جنوبی کشمیر کے ضلع اننت ناگ میں پیر کے روز متعدد احتجاجی مظاہرین اس وقت زخمی ہوگئے جب مقامی لوگوں نے کرفیو توڑتے ہوئے لال چوک کی طرف بڑھنے کی کوشش کی۔
قابل ذکر ہے کہ علیحدگی پسند قیادت سید علی گیلانی، میرواعظ مولوی عمر فاروق اور محمد یاسین ملک نے 25جولائی کو حریت پسند قیادت اور وادی کے عوام خاص طور پر جنوبی کشمیر کے لوگوں کو اننت ناگ کے تاریخی لال چوک میں جمع ہوکر نماز ظہر کے موقع پر ہلاک شدگان کو اجتماعی طور پر خراج عقیدت پیش کرنے کی اپیل کی تھی۔
تاہم کشمیر انتظامیہ نے جنوبی کشمیر کے چار اضلاع میں عائد کرفیو میں مزید سختی برتتے ہوئے علیحدگی پسند قیادت کے اس پروگرام کو ناکام بنادیا۔ ذرائع نے بتایا کہ ضلع اننت ناگ میں سینکڑوں کی تعداد میں لوگ کرفیو توڑتے ہوئے لال چوک کی طرف بڑھنے لگے۔ تاہم سیکورٹی فورسز نے کشمیر کی آزادی کے حق میں نعرے بازی کررہے اِن احتجاجی لوگوں کو آنچی ڈارہ کے مقام پر روکا۔ جب احتجاجی لوگوں نے واپسی کا راستہ اختیار کرنے سے انکار کیا تو سیکورٹی فورسز نے پہلے لاٹھی چارج اور پھر آنسو گیس کے گولے داغے۔
ذرائع نے بتایا کہ سیکورٹی فورسز کی کاروائی میں متعدد افراد زخمی ہوگئے ہیں۔ جنوبی کشمیر کے کچھ دیگر علاقوں سے بھی احتجاجی مظاہرین اور سیکورٹی فورسز کے مابین جھڑپوں کی اطلاعات موصول ہوئیں۔ ایک رپورٹ کے مطابق کرفیو زدہ سری نگر کے شہرخاص میں بھی احتجاجی مظاہرین اور سیکورٹی فورسز کے مابین جھڑپیں ہوئیں جس دوران سیکورٹی فورسز نے احتجاجیوں کو منتشر کرنے کے لئے لاٹھی چارج اور آنسو گیس کا استعمال کیا۔ (یو ا ین آئی)

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Clashes break out in anantnag again several injured in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply