وادی کشمیر میں چکہ جام ، بسیں سڑکوں سے غائب ،عوام سخت پریشان

سری نگر:وادی کشمیر میں بدھ کے روز کشمیر ٹرانسپورٹرس ویلفیئر ایسو سی ایشن (کے ٹی ڈبلیو اے) کی دو روزہ ’چکہ جام‘ ہڑتال کی کال پر تمام بسیں اور منی بسیں سڑکیں سے غائب رہیں۔ کے ٹی ڈبلیو اے نے ہڑتال کی کال سری نگر میں جنرل بس اسٹینڈ بٹ مالو کو پارمپور منتقل کرنے کے حکومتی فیصلے کے خلاف دے رکھی ہے۔ ہڑتال کی وجہ سے وادی کے تمام اضلاع کو سری نگر کے ساتھ جوڑنے والی سڑکوں پر بسوں اور منی بسوں کی آمدورفت معطل رہی جس کے نتیجے میں ان بسوں کے ذریعے ہر روز سفر کرنے والے ہزاروں مسافروں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ تاہم سٹیٹ روڑ ٹرانسپورٹ کارپوریشن کی بسیں معمول کے مطابق چلتی رہیں۔ کے ٹی ڈبلیو اے کا کہنا ہے کہ بس اسٹینڈ کی پارمپورہ منتقلی سے جنرل بس اسٹینڈ بٹ مالو میں سینکڑوں بسوں اور منی بسوں سے منسلک افراد کا ذریعہ معاش بری طرح سے متاثر ہوگا۔ ٹرانسپورٹرس ایسو سی ایشن نے دھمکی دی ہے کہ اگر حکومت نے بس اسٹینڈ کی منتقلی پر اپنا فیصلہ نہیں بدلا تو وہ اپنی ہڑتال میں مزید شدت لائیں گے۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Chakka jam in kashmir in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply