وادی کشمیر میں26جنوری کی تقریبات میں سرکاری ملازمین کی شرکت لازمی قرار دے دی گئی

سری نگر : (یو ا ین آئی) جموں وکشمیر حکومت نے یوم جمہوریہ کی سرکاری تقریبات میں اپنے ملازمین کی سرکاری کو ایک بار پھر لازمی قرار دے دیا ہے۔ حکومت نے اس حوالے سے جاری کردہ سرکلر میں خلاف ورزی کے مرتکب پائے جانے والے سرکاری ملازمین کو تادیبی کاروائی کا انتباہ دیاہے۔ جموں وکشمیر کے حالات پر گہری نگاہ رکھنے والے مبصرین کا کہنا ہے کہ سرکاری ملازمین کی یوم آزادی اور یوم جمہوریہ کی تقریبات میں شرکت کو اس لئے لازمی قرار دیا جاتا ہے کیونکہ ریاست بالخصوص وادی کشمیر میں عام شہری ایسی تقریبات کا کلی طور پر بائیکاٹ کرتے ہیں۔
مبصرین کا مزید کہنا ہے ’یہاں تک کہ قومی دھارے میں شاملسیاسی جماعتوں کے لیڈروں کو بھی ایسی تقریبات میں اپنے کارکنوں کو شرکت کرنے کے لئے قائل کرنے میں خاصی تگ و دو کرنی پڑتی ہے‘۔ .رپورٹوں کے مطابق ریاستی حکومت کے جنرل ایڈمنسٹریشن ڈیپارٹمنٹ جس کا کام کاج خود ریاستی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی دیکھتی ہیں، نے سرکیولر نمبر 03 جی اے ڈی آف 2017 مورخہ 10 جنوری میں وادی کے ضلع ترقیاتی کمشنروں سے کہا ہے کہ وہ 26 جنوری کی تقریبات میں سرکاری ملازمین کی شرکت کو یقینی بنائیں۔ اس سرکیولر پر عمل درآمد کرتے ہوئے وسطی ضلع بڈگام کے ضلع ترقیاتی کمشنر نے ایک حکم نامہ جاری کرکے تمام ضلع و سیکٹر افسروں سے کہا ہے کہ وہ اپنے پورے ماتحت عملے کے ساتھ اپنے متعلقہ علاقوں میں ہونے والی یوم جمہوریہ کی تقریبات میں شمولیت کو یقینی بنائیں۔
ڈپٹی کمشنر بڈگام کی جانب سے جاری کردہ حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ 26 جنوری کو کوئی تعطیل نہیں ہے اور اس دن کوئی سرکاری ملازم چھٹی نہیں لے سکتا ہے۔ حکم نامے میں کہا گیا ہے ’26 جنوری کو کوئی تعطیل نہیں ہے۔ ڈیوٹی کے حصے کے طور پر سرکاری ملازم کو یوم جمہوریہ کی تقریب میں شرکت کرنی ہے۔ ہر ایک ملازم کو اپنی شرکت یقینی بنانی ہوگی اور اس دن کے لئے کوئی چھٹی منظور نہیں کی جائے گی‘۔ ضلع ترقیاتی کمشنر نے اس حکم نامے کی خلاف ورزی کرنے والے سرکاری ملازمین کو تادیبی کاروائی کا انتباہ بھی دیا ہے۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Attend r day functions or face action jammu and kashmir govt to employees in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply