کشمیر میں فوجی گاڑی کی زد میں آکر 9سالہ بچی ہلاک، مظاہرہ، پولس کارروائی، 20زخمی

سری نگر :جنوبی کشمیر کے ضلع شوپیان کے زینہ پورہ میں جمعرات کی صبح اس وقت شدید احتجاجی مظاہرے بھڑک اٹھے جب ایک 9 سالہ اسکولی طالبہ فوجی گاڑی کی زد میں آکر ہلاک ہو گئی۔ مہلوک اسکولی طالبہ کی شناخت اروبا کے طور پر کی گئی ہے جو زینہ پورہ سے ملحقہ گاؤں اگلر کی ر ہائشی بتائی جاتی ہے۔ بتایا جارہا ہے کہ وہ دوسری جماعت میں زیر تعلیم تھی۔ ایک رپورٹ کے مطابق گاڑی کی زد میں آنے کے بعد فوجی اہلکاروں نے اگرچہ اروبا کو نذدیکی اسپتال منتقل کیا، تاہم وہاں اسے مردہ قرار دیا گیا۔
فوجی گاڑی کی زد میں آنے سے اسکولی طالبہ کی موت ہوجانے کی خبر جوں ہی زینہ پورہ میں پھیل گئی تو لوگ بڑی تعداد میں سڑکوں پر آگئے اور کیمونٹی ہیلتھ سینٹر کے باہر فوج کے خلاف احتجاج کرنے لگے۔ وہ قصور وارڈرائیور کی گرفتاری کا مطالبہ اور اس کے خلاف ایف آئی آر کے اندراج کا مطالبہ کررہے تھے۔ ذرائع نے بتایا کہ ریاستی پولیس اور سیکورٹی فورسز نے موقع پر پہنچ کر پہلے لاٹھی چارج اور بعدازاں آنسو گیس و پیلٹ گنکا استعمال کیا جس میں20افراد زخمی ہوگئے۔ مقامی لوگوں نے الزام لگایا کہ اسکولی طالبہ کو کچلنے والی فوجی گاڑی کا ڈرائیور اسے انتہائی تیز رفتاری سے چلارہا تھا۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Army vehicle crushes minor girl to death in shopian village protests erupt in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply