پاکستانی فوج کی فائرنگ کی چھاؤں میں کاروان امن بس سروس پھر شروع

سرینگر:(یو این آئی)ہندوستانی سرحد کے اری سیکٹر میں پاکستانی فوجیوں کی جانب سے لگاتار جنگ بندی معاہدہ کی خلاف ورزی کے واقعات کے باوجود سرینگر اور پاکستان مقبوضہ کشمیر کی راجددھانی مظفرآباد کے درمیان چلنے والی ’کاروان امن بس سروس‘آج پھر سے شروع ہوگئی۔گزشتہ ہفتہ دیوالی کے سبب اس سروس کو ملتوی کردی گئی تھی۔
سرکاری ذرائع نے یو این آئی کو بتایا کہ یہ ہفتہ واری بس سروس آج صبح سرینگر سے آخری ہندوستانی چوکی کمان پوسٹ کیلئے روانہ ہوئی اور اس میں 13خواتین اور ایک بچہ سمیت کل 29افراد سوارتھے۔ یہ بس اری کے ٹریڈ فیسیلیئشن سینٹر (ٹی آر سی)پہنچی جہاں سے اس میں مزید مسافر سوار ہوں گے۔دوپہر بعد ہی بس کے مسافروں کی اصل تعداد کا پتہ چلے گا۔
دریں اثنا گزشتہ24گھنٹوں میں پاکستانی فوجیوں نے ہندوستانیوں چوکیوں کو نشانہ بناکر بلاوجہ فائرنگ کی اور دونوں ممالک کے درمیان 2003میں سیز فائر معاہدہ کی خلاف ورزی کی۔حالانکہ اس فائرنگ میں کسی کے مارے جانے کی اطلاع نہیں ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ گزشتہ ہفتہ بس سروس کو ملتوی کئے جانے کے بعد یہ مسافر اس سے سفر نہیں کرسکے تھے انہیں آج شامل کر لیاگیا ہے۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Amid pak firing karwan e aman resumes in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply