ہلاکت خیز دہشت گردانہ حملے کے باوجود امرناتھ یاترا جاری

سری نگر:جنوبی کشمیر کے ضلع اننت ناگ میں جنگجویانہ حملے میں امرناتھ یاتریوں کی ہلاکت کے باوجود وادی کشمیر میں امرناتھ یاترا جاری رکھی گئی ہے۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ سخت ترین حفاظتی انتظامات کے بیچ یاتریوں کا تازہ قافلہ منگل کی علی الصباح یاتری نواسن بیس کیمپ جموں سے جنوبی کشمیر میں واقع امرناتھ گھپا کی طرف روانہ ہوا۔ انہوں نے بتایا کہ امرناتھ یاترا کے راستوں بالخصوص سری نگر جموں قومی شاہراہ پر سیکورٹی فورسز اور ریاستی پولیس کے اہلکاروں کی اضافی نفری تعینات کی گئی ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ سیکورٹی فورس اہلکاروں کو شاہراہ پر مشتبہ گاڑیوں اور افراد کی نقل وحرکت پر کڑی نگاہ رکھنے کے لئے کہا گیا ہے۔
سینٹرل ریزرو پولیس فورس کے انسپکٹر جنرل آف پولیس (آپریشنل) ذوالفقار حسن نے منگل کی صبح حملے کے مقام کا دورہ کرکے شاہراہ پر سیکورٹی کی صورتحال کا آن سپاٹ جائزہ لیا۔ انہوں نے وہاں نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے کہا ’حملے کی تحقیقات جموں وکشمیر پولیس کررہی ہے۔ عنقریب یہ معلوم ہوگا کہ یہ حملے کیسے اور کس طرح کیا گیا۔ یاترا جاری ہے۔ ہم نے یاترا کو نہیں روکا ہے۔ ہم یقینی بنائیں گے کہ یاترا جاری رہے‘۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ جموں بیس کیمپ کے علاوہ وادی میں بال تل اور ننون پہل گام بیس کیمپوں سے بھی یاتریوں کے تازہ قافلے مقدس گپھا کی طرف روانہ ہوئے۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Amarnath pilgrims continue on yatra in thousands despite monday nights terror attack in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply