کشمیر کے بگڑتے حالات پر آل انڈیا مسلم مجلس مشاورت نے گہری تشویش کا اظہار کیا

نئی دہلی:آل انڈیا مسلم مجلس مشاورت نے وادی کشمیرمیں بگڑتی صورتحال اور گذشتہ آٹھ مہینوں سے جاری مسلسل تشددپر گہری تشویش کا اظہارکرتے ہوئے حکومت سے کشمیر میں قیام امن کیلئے فوراًمذاکرات شروع کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ مشاورت کے صدر نوید حامد نے ریاست میں امن وامان قائم بحال کرنے میں ناکامی کیلئے مودی حکومت اورریاستی پی ڈی پی و بی جے پی کی اتحادی حکومت کو ذمہ دار ٹھہرایاہے۔انہوں نے دعویٰ کیا کہ کشمیری عوام میں حکومت کے خلاف غصہ اور بداعتمادی ہے۔ صدر مشاورت نے بی جے پی قیادت کی شدیدنکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ نئی دہلی میں پالیسی سازوں کی ہدایت کے تحت پتھر بازوں کے ساتھ سیکورٹی فورسز کاشدید ردعمل ریاست میں حالات کو معمول پر لانے کی کوششوں کو شدید دھچکا پہنچارہاہے۔اس بحران کا ایک بدنماپہلو یہ بھی ہے کہ بی جے پی لیڈران اس بات کو منوانے کیلئے مسلسل بضد ہیں کہ کشمیر میں لاء اینڈ آرڈر کا مسئلہ ہے اور یہ کوئی ایسا سیاسی بحران نہیں ہے جس کو تمام فریقین کے ساتھ ڈائیلاگ، بات چیت اورلوگوں تک رسائی کے ذریعہ حل کرنے کی کوشش کی جائے۔ مسٹر نوید حامد نے کہا کہ یہ ستم ظریفی ہی کی بات ہے کہ حکومت کے پاس پتھر بازوں سے نمٹنے کیلئے پوری قوت کے ساتھ فوج کو استعمال کرنے کی پالیسی موجود ہے لیکن وہی حکومت سکما۔بستر،مدھیہ پردیش میں جدید ترین اسلحوں سے پوری طرح لیس عسکریت پسندوں کانشانہ بننے والے سی آرپی ایف کے عملوں کو جدید ہتھیار تک مہیانہیں کراتی۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: All india majlis e mushawrat express concern ove kashmir situation in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News

Leave a Reply