کشمیر میں دو روز کے دوران سلامتی دستوں کے ساتھ تصادم میں 3خونخوار دہشت گرد ہلاک

سری نگر: جموں و کشمیر میں انتہاپسندوں اور سلامتی دستوں کی آئے روز مسلح تصادم ہونے کا سلسلہ ہنوز جاری ہے اورگذشتہ24گھنٹے کے دوران3دہشت گرد مارے گئے۔ تازہ ترین جھڑپ میں ، جو ریاست کے بارہمولہ ضلع میں رات بھر ہوتی رہی ایک دہشت گرد مارا گیا ۔

ایک سرکاری اہلکار کے مطابق سلامتی دستوں اور انتہاپسندوں میں فائرنگ کا تبادلہ اس وقت شروع ہوا جب اس علاقہ میں دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے کے بعد سلامتی دستوں نے منگل کی شام میں تلاش مہم شروع کی۔ اہلکار نے مزید بتایا کہ دہشت گردوں کے فرار ہونے کے تمام راستے مسدود کرنے کے لیے علاقہ کو پوری طرح سے گھیر لیا گیا۔

انتہاپسندوں نے فرار کی تمام راہیں مسدود پا کر سلامتی دستوں پر فائرنگ شروع کر دی۔سلامتی دستوں نے بھی جوابی فائر کیے جس کے بعد فائرنگ کا باقاعدہ تبادلہ شروع ہو گیا۔ جس میں ایک دہشت گرد مارا گیا۔جائے تصادم سے دہشت گرد کی لاش مل گئی۔ اس کی شناخت اور تنظیم سے وابستگی کا سراغ لگانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ منگل کے روز بھی دولت اسلامیہ فی العراق و الشام (داعش) کے جموں کشمیر یونٹ کے دو دہشت گرد شوپیان میں مارے گئے تھے۔

ایک پولس ترجمان نے اس ضمن میں بتایا کہ کلگام کے یاری پورہ کے رہائشی سیار احمد بٹ اور شوپیان نے انویرا علاقہ کے شاکر احمد واطگے کو منگل کی صبح کی جانے والی کارروائی کے دوران گھیر لیا گیا۔خود کو سدرچ پارٹی کے نرغے میں پاکر روپوش دہشت گردوں نے سلامتی دستوں کے اہلکاروں پر فائرنگ شروع کر دی۔سلامتی دستوں کی جوابی کارروائی میں دو د ہشت گرد مارے گئے۔

پولس ریکارڈ کے مطابق واگے زینا پورہ کے ایک شخص عرفان حمید کے قتل میں ملوث تھا اور پولس کو مطلوب تھا۔ہلا ہونے نوالے دونوں دہشت گردوں کے بارے میں علم ہوا ہے کہ دونوں داعش کے نظریات سے متاثر تھے۔اور دہشت گردانہ کارروائیاں کرنے پر پولس کو ان کی شدت سے تلاش تھی۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: 3 militants gunned down in jk in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.