نوٹ بند کرنے کے باعث آنے والے دن اور بھی بد تر ہوں گے : منموہن سنگھ

نئی دہلی:سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ نے نوٹوں کی منسوخی پر آج حکومت کو نہ صرف آڑے ہاتھوں لیا بلکہ کہا کہ ”ابھی تو اور برے دن آنے باقی ہیں “۔ ڈاکٹر سنگھ نے یہاں ’جن ویدنا سمیلن ‘ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ” ابھی اور برے دن آنے باقی ہیں۔ ہر کانگریسی مرد عورت کا یہ اخلاقی فرض ہے کہ وہ حسب تقاضہ حرکت میں آئیں اور بیداری کی واضح پکار دیں “۔
انہوں نے کہا کہ ”پچھلے دو مہینوں میں حالات صرف بدسے بدتر ہوئے ہیں “۔ سابق وزیر اعظم نے کہا کہ حکومت کے ”پروپگنڈے “ کے عین برعکس نوٹوں کی منسوخی کے برے نتائج اس طرح مرتب ہونگے کہ بے روزگاری بڑھے گی اور زراعت ، صنعت اور سروس سیکٹروں میں بڑے پیمانے پر زوال آئے گا۔ انہوں نے کہا کہ پیداواری شعبہ خاص طور پر غیر رسمی پیداواری شعبے میں زوال آئے گا جس کا قومی آمدنی پر تقریباً 45 فیصد اثر پڑے گا۔اسی کے ساتھ انہوں نے ان الفاظ میں آہ بھری کہ ”نوٹوں کی منسوخی کا یہ فیصلہ کس قدر تباہ کن تھا“۔
کانگریس کے نائب صدر راہل گاندھی اور سابق وزیر خزانہ پی چدمبرم کے ظاہر کردہ اندیشوں اور باتوں کی تائید کرتے ہوئے ڈاکٹر سنگھ نے کہا کہ ایک سے زیادہ ریٹنگ ایجنسیاں پیش قیاسی کرچکی ہیں کہ مجموعی گھریلو پیداوار میں کوئی 6.3 فی صد کی گراوٹ آئے گی۔ انہوں نے کہا کہ نوٹوں کی منسوخی کے اقدام سے چند ماہ قبل 7.6 فی صد کی شرح سے مجموعی گھریلو پیداوار میں فروغ کی پیش قیاسی کی گئی تھی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Worst is yet to come ex pm manmohan singh on modis demonetisation in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply