پوری دنیا کوسمندر، آسمان اور خلا سے سلامتی کو درپیش خطرات سے نپٹنے کے لیے ایک نظریہ اختیار کرنے کی ضرورت: ایم جے اکبر

پنجی: مرکزی وزیر مملکت خارجہ ایم جے اکبر نے کہاہے کہآسمان، سمندر اور خلا سے سارے عالم کو سلامتی کے جو خطرات لاحق ہیں انہیں دور کرنے اور ان سے بچنے کاکوئی حل نکالنے کے سرجوڑ کر بیٹھ کر سوچنے اور کوئی نظریہ قائم کرنے کی ضرورت ہے۔
سمندری تحفظ پر سہ روزہ کانفرنس کی افتتاحی تقریب سے، جس میں 22ممالک کے نمائندے شرکت کر رہے ہیں، خطاب کرتے ہوئے مسٹر اکبر نے کہا کہآج ضرورت اس بت کی ہے کہ ٹکراؤ کے بجائے ہم آہنگی و یکجہتی قائم کی جائے۔اس ضمن میں انہوں نے بابائے قوممہاتما گاندھی کا خاص طور پر ذکر کیا کہ انہوں نے آزادی سے قبل عدم تشدد کی جو تحریک چلائی تھی وہ یوروپی استعماریت کو تباہ کرنے کے لئے استعمال میں لائی جانے والی ہندستانی سوچ تھی۔
انہوں نے مزید کہا کہ ”میرے خیال میں گاندھی جی کا معجزہ یہ نہیں تھا کہ انہوں نے اولین عوامی تحریک چلائی۔ گاندھی کے معجزہ کی شہادت تو اس سچ سے ملتی ہے کہ انہوں نے یوروپی استعماریت کو تباہ کرنے کے لئے ہندستانی سوچ سے استفادہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ قبل ازیں لوگ حیران تھے کہ استعماریت کو کیسے شکست ہوئی۔
یہ ہندستانی سوچ تھی جسے ستیہ گرہ کے نام سے جانا جاتا ہے اور ستیہ گرہ محض عدم تشدد نہیں۔ یہ حق کی طاقت ہے اور کسی نےروایتی نہیں بلکہ قابل فہم فلسفیانہ طریقے سے اسے ایک سوچ میں بدل دیا۔ اور یہ اسی کا نتیجہ ہے کہ ہندستان حقیقی معنوں میں عوامی جمہوریہ بن کر ابھرا ۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: World needs doctrine to address security challenges from sea sky space mj akbar in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News
Tags: , , ,

Leave a Reply