کانگریس نے میرا کا نام پہلے ہی پیش کر دیا ہوتا تو اس کی حمایت کی جاتی: جے ڈی یو

نئی دہلی: اپوزیشن کی صدارتی امیدوار میرا کمار کی حمایت نہ کرنے کے حوالے سے جنتا دل (یو) نے آج واضح کیا کہ کانگریس نے کبھی بھی مسز کمار کی امیدواری پر اس کے ساتھ بات چیت نہیں کی۔ متحدہ جنتا دل کے سیکرٹری جنرل کے سی تیاگی نے آج یہاں نامہ نگاروں سے بات چیت میں کہا کہ ایک اہم اپوزیشن پارٹی ہونے کے باوجود کانگریس نے مسز کمار کو صدر کے عہدے کا امیدوار بنانے پران کی پارٹی کے ساتھ کوئی صلاح و مشورہ نہیں کیا۔
” کانگریس نے اگر قومی جمہوری اتحاد کے صدارتی امیدوار رام ناتھ کووند کا نام اعلان ہونے سے پہلے مسز کمار کے نام کی تجویز پیش کی ہوتی تو پارٹی ان کی حمایت کر سکتی تھی“۔ انہوں نے کہا کہ کانگریسی لیڈروں کا ان کی پارٹی سربراہ اور بہار کے وزیر اعلیٰ نتیش کمار کے خلاف منفی تبصرہ کرنا بدبختانہ ہے۔ میڈیا میں اس طرح کے کچھ تبصروں سے صدمہ پہنچا ہے۔ جے ڈی یو لیڈر کا یہ بیان کانگریس کے سینئر لیڈر غلام نبی آزاد کے اس بیان کے تناظر میں آیا ہے جس میں انہوں نے مسٹر کمار کی مسٹرکووند کی حمایت پر تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔ مسٹر آزاد نے کہا تھا کہ وہ لوگ جو ایک اصول میں یقین کرتے ہیں وہ ایک فیصلہ لیتے ہیں لیکن جو کئی اصولوں پر یقین رکھتے ہیں وہ مختلف فیصلے کرتے ہیں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Why is congress bent on ending grand alliance says kc tyagi in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply