پاکستان روس تعلقات سے ہندوستان کو کوئی مطلب نہیں:خارجہ ترجمان

نئی دہلی:وزارت خارجہ کے ترجمان وکاس سوروپ نے کہاکہ ہندوستان کے روس سے تعلقات خصوصی نوعیت کے ہیں جنہیں روسی صدر ولادمیر پوتین کے دورہ ہند سے مزید استحکام حاصل ہوا ہے۔انہوں نے یہ بات آج یہاں معمول کی بریفنگ میں روس اور پاکستان کے درمیان تعلقات پر ایک سوال کے جواب میں کہی۔ ترجمان نے مزید کہا کہ ہم دیگر ممالک کے باہمی تعلقات پرتبصرہ نہیں کرتے۔ لیکن جہاں تک ہندوستان اور روس کے تعلقات کی بات ہے تو ہمارے تعلقات خصوصی اہمیت کے حامل ہیں۔
صدر ولادمیر پوتن کے اکتوبر میں گوا دورے کے دوران یہ تعلقات اور مضبوط ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں روس سے اپنے تعلقات میں کوئی کمی نہیں دکھائی نہیں دیتی۔ مسٹر سوروپ نے کہا کہ جہاں تک طالبان کا سوال ہے تو انہیں بین الاقوامی ضابطوں کا احترام کرنا ہوگا۔ انہیں دہشت گردی اور تشدد ترک کرنا ہوگا، القاعدہ سے تمام تعلقات ختم کرنے ہوں گے، جمہوری قوانین کو ماننا ہوگا اور ایسا کچھ بھی نہیں کرنا ہو گا جس سے گزشتہ 15 سال میں حاصل کی گئی کامیابیوں کو نقصان پہنچے۔
انہوں نے یہ بھی کہا کہ بالآخر افغان حکومت کو ہی طے کرنا ہوگا کہ وہ کس سے کب اور کس طرح بات کرتی ہے۔ افغانستان کی حکومت کو اقتدار سے بے دخل کرنے کے لئے لڑ رہے طالبان کے ساتھ روس کے تعلقات سے افغانستان اور امریکہ کے اہلکار فکر مند ہیں۔ انہیں خدشہ ہے کہ دونوں کے درمیان تعلقات بڑھنے سے پہلے سے ہی خراب افغانستان کی سلامتی کی صورتحال اور مزید خراب ہو سکتی ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: We do not comment on the relationship between third countries vikas swarup in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply