عقیدت کے نام پر تشدد برداشت نہیں کیا جائے گا: وزیر اعظم

نئی دہلی:وزیر اعظم نریندر مودی نے عقیدت کے نام پر تشدد پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ قانون ہاتھ میں لینے کا کسی کو حق نہیں ہے اور عقیدت کے نام پر تشدد برداشت نہیں کیا جائے گا۔ مسٹر مودی نے ہر ماہ ریڈیو پر نشر ہونے والے اپنے پروگرام ’من کی بات‘ میں ہریانہ میں ہونے والے تشدد کی طرف اشارہ کرتے ہوئے سخت الفاظ میں کہا کہ کسی بھی طرح کے تشدد کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا ”میں نے لال قلعہ سے بھی کہا تھا کہ عقیدت کے نام پر تشدد برداشت نہیں ہوگا، چاہے وہ فرقہ وارانہ عقیدت ہو، سیاسی نظریہ کے تئیں عقیدت ہو، ، روایات کے تئیں عقیدت ہو،عقیدت کے نام پر کسی کو بھی قانون کو ہاتھ میں لینے کا حق نہیں ہے“۔
انہوں نے سخت لہجے میں کہا ”میں ملک کے باشندوں کو یقین دلانا چاہتا ہوں، قانون ہاتھ میں لینے والے، تشدد کی راہ پر چلنے والے کوئی بھی ہو، چاہے وہ شخص ہو یا گروپ ہو، نہ یہ ملک کبھی برداشت کرے گا اور نہ ہی کوئی حکومت برداشت کرے گی۔ ہر ایک کو کسی بھی معاملہ کے لیے عدالت سے رجوع کرنا پڑے گا اور قانون فیصلہ کرے گا اور مجرموں کو سزا دے گا“۔ مسٹر مودی نے کہا کہ یہ المناک اور تشویشناک ہے کہ ایک طرف ملک میں تہوار منائے جا تے ہیں اور دوسری طرف ملک کے کسی نہ کسی حصہ سے عقیدت کے نام پر تشدد کی خبریں آتی ہیں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Violence will not be tolerated says narendra modi in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply