سہارنپور میں دلت لڑکی سے چھیڑ خانی پر گروہی تصادم، فائرنگ، پولیس اہلکار سمیت کئی زخمی

سہارنپور :(یو این آئی) اترپردیش میں سہارنپور کے بیہٹ کوتوالی حلقے میں دلت لڑکی سے چھیڑ چھاڑ کے بعد دوفریقوں میں پتھراؤ کے بعد ہوئی فائرنگ میں پولیس اہلکار سمیت کئی افراد زخمی ہو گئے۔ پولیس سپرنٹنڈنٹ (دیہی) جگدیش شرما نے آج یہاں بتایا کہ بیہٹ کوتوالی حلقہ کے اوسنڈ گاؤں میں کل رات ایک دلت لڑکی پرائیویٹ ڈاکٹر کی کلینک پر دوا لینے گئی تھی۔
لڑکی کا الزام ہے کہ وہاں پہلے سے موجود دو نوجوانوں نے اس کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کی۔ اس پر دونوں طرف کے لوگوں نے ایک دوسرے پر پتھراؤ اور فائرنگ کی۔ انہوں نے بتایا کہ اطلاع ملنے پر جائے حادثہ پہنچی پولیس پر بے قابو ہجوم نے پتھراؤ کر دیا اور کچھ فسادیوں نے چھتوں پر چڑھ کر فائرنگ بھی کی۔ پتھراؤ میں مہیش اور راجندر سمیت کئی پولیس اہلکار زخمی ہو گئے۔
انہوں نے بتایا کہ پولیس نے بھی ہوا میں فائرنگ کی۔ واقعہ کے بعد پولیس نے گھروں کی تلاشی لی اور ایک ملزم سمیت پانچ فسادیوں کو گرفتار کیا گیا۔ احتیاط کے طور پر گاؤں میں پولیس فورس تعینات کی گئی ہے۔ اس سلسلے میں پولیس کی جانب سے گرام پردھان روندر پرتاپ، دھیر سنگھ، سندیپ اور سنجو سمیت سات افراد کو نامزد کرتے ہوئے 60 نامعلوم افراد کے خلاف سنگین دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Violence after dalit girl molested in saharanpur in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply