مظفر نگر میں پھر فرقہ وارانہ تشدد،کشیدگی

 نئی دہلی: یہاں موصول اطلاع کے مطابق اترپردیش کے فرقہ وارانہ نوعیت سے نہایت حساس شہرمظفر نگر میں ایک بار اس وقت تشد د کی آگ بھڑک اٹھی جب گذشتہ روز ایک لڑکی سے چھیڑ خانی کی واردات کے بعد ہوئے جھگڑے نے تشدد کا رخ اختیار کر لیا۔
جمعرات کو چھیڑ خانی کی ہوئی واردات کے بعد دو فریقوں میں پر تشدد جھڑپ ہو گئی جس کے بعد ملزموں کو حراست میں لینے پر سیکڑوں افراد نے کوتوالی کا گھیراو¿ کر لیا۔ ملزموں کو گرفتار کرنے کے بعد تشدد کرنے والے ملزموں کو چھڑانے کے لئے ایک فرقہ کی مشتعل بھیڑ کوتوالی پہنچ کر مظاہرہ کرنے لگی۔
جس کے بعد پولس نے لاٹھی چارج کر کے مظاہرین کو منتشر کر دیا۔ کہا جارہا ہے کہ جمعرات کی صبح مظفر نگر کے کوتوالی تھانہ علاقہ میں ایک لڑکی کو چھیڑنے کی واردات ہوئی تھی جس کے بعد دونوں فرقہ کے لوگوں میں تکرار ہو گئی اور فریقین نے ایک دوسرے پر پتھراو¿ اور فائرنگ بھی کی جس نے خطرناک صورت حال اختیار کر لی
۔پولس لاٹھی چارج کے خلاف مظفر نگر کے بی جے پی ممبر اسمبلی کپ دیو اگروال نے دھرنا دے دیا اور ساتھ ہی گرفتار نوجوانوں کی رہائی کا بھی مطالبہ کیا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Violance in muzaffarnagar over eve teasing in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply