اترپردیش میں آئی اے ایس افسر کی پر اسرار موت پر اسمبلی میں حزب اختلاف کی ہنگامہ آرائی

لکھنؤ: اترپردیش کی راجدھانی لکھنؤ میں انڈین ایڈمنسٹریٹو سروس (آئی اے ایس) افسر کی مشتبہ صورتحال میں ہوئی موت پر ریاستی اسمبلی میں اپوزیشن نے زبردست ہنگامہ کرتے ہوئے قانون و انتظام کی ابتر حالت کا الزام لگا کر ایوان سے واک آؤٹ کیا۔ ایوان کی کارروائی شروع ہوتے ہی سماج وادی (ایس پی) کی قیادت میں اپوزیشن نے قانون و انتظام کے معاملے پر ایوان کو ملتوی کرنے کا مطالبہ کیا جسے اسپیکر ہردے نارائن دکشت نے نامنظور کردیا۔ ایس پی، بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) اور کانگریس کے اراکین نے کرناٹک کیڈر کے آئی اے ایس افسر انوراگ تیواری کی مشتبہ حالت میں موت کا معاملہ اٹھایا۔
پارلیمانی امور کے وزیر سریش کمار کھنہ نے اس معاملے میں اپوزیشن کے سوالوں کا جواب دیتے ہوئے کہاکہ آئی اے ایس افسر کے گھر والوں کا کہنا ہے کہ متوفی آئی اے ایس افسر کانگریس کی حکمرانی والے کرناٹک کے ایک بڑے گھپلے کا انکشاف کرنے والے تھے۔ انہوں نے کہاکہ اس افسوس ناک واقعہ کے سلسلے میں یوگی حکومت سنجیدہ ہے۔ ہلاک شدہ افسر کی لاش کا پوسٹ مارٹم چار ڈاکٹروں کے پینل سے کرایا گیا ہے اور ’وسرا‘ محفوظ رکھ لیا گیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ اس واقعہ میں اگر کوئی قصوروار پایا گیا تو اسے کسی بھی صورت میں بخشا نہیں جائے گا۔ مسٹر کھنہ کے جواب سے غیرمطمئن ایس پی، کانگریس اور بی ایس پی کے اراکین نے ہنگامہ کرتے ہوئے واک آؤٹ کیا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Uproar in up assembly over ias officer death in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply