مدھیہ پردیش میں گؤ تحفظ کی آڑ میں مسلم خواتین کی پٹائی کی راجیہ سبھا میں گونج

نئی دہلی: مدھیہ پردیش میں گؤ تحفظ کے نام پر مسلم خواتین کی سر عامپٹائی کا معاملہ آج راجیہ سبھا میں زبردست انداز میں اٹھایا گیا۔ وقفہ صفر میں جب بی ایس پی صدرکی محترمہ مایاوتی نے بڑے غصے میں یہ مسئلہ اٹھایا تو کانگریس، ایس پی، جے ڈی یو سمیت تمام اپوزیشن جماعتوں نے اس واقعہ کی ایک آواز میں اور زوردار انداز میں مذمت کی۔
کانگریس اور بی ایس پی کے رکن اتنے غصہ میں آ گئے کہ وہ نعرے بازی کرتے ہوئے چیئرمین کی کرسی کے پاس جا پہنچے اور تقریبا دس منٹ تک ہنگامہ کرتے رہے اور ایوان کی کاروائی کو چلنے نہیں دیا۔ محترمہ مایاوتی نے کہا کہ حال ہی میں بی جے پی کی حکومت والی ریاست گجرات میں دلت سانحہ ہوا جو کسی سے پوشیدہ نہیں ہے۔
پھر مدھیہ پردیش میں گؤ تحفظ کے نام پر خواتین کو مارا پیٹا گیا، ان پر ظلم و ستم کیا گیا اور بھیڑ تماشا دیکھتی رہی اور پولیس بھی خاموشی سے یہ سب دیکھتی رہی۔ انہوں نے کہا کہ ایک طرف تو بیٹی کے اعزاز میں بی جے پی میدان میں نعرے لگا رہی ہے تو دوسری طرف مسلم خواتین کی سر عام پٹائی کی جا رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہریانہ میں بھی گﺅ تحفظ کے نام پر یہی ہوا۔حکومت اس پر جواب دے۔
محترمہ مایاوتی کے یہ کہتے ہی اپوزیشن اراکین اپنے غصے کا اظہار کرتے ہوئے ہنگامہ کرنے لگے۔ہنگامہ آرائی کے جواب میں پارلیمانی امور کے وزیر مملکت مختار عباس نقوی نے کہا کہ خواتین کو زدو کوب کرنے والوں کے خلاف کارروائی کی گئی ہے اور دلتوں کے ساتھ ظلم کرنے والے نوجوانوں کو بھی گرفتار کیا گیا ہے۔ اس طرح کا واقعہ قابل مذمت ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Uproar in rs on beating of muslim women in madhya pradesh in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply