پانچ مہینے سے لاپتہ 11 سالہ بیٹے کی تلاش میں ڈیڑھ ہزار کلومیٹر سائیکل چلا کر بھی باپ نہ تھکا

نئی دہلی: اترپردیش کے ہاتھرس ضلع کے ایک قصبہ ساسنی کے گاؤں دوارکا پور کے ستیش چندر نام کا ایک شخص گذشتہ چھ ماہ سے لا پتہ اپنے 11 بیٹے کی تلاش میں سائیکل پر ڈیڑھ ہزار کلومیٹرکا راستہ طے کر چکا ہے۔
اس دوران وہ جھانسی، دہلی کانپور ، آگرہ جا چکا ہے لیکن ابھی تک بچے کا سراغ نہیں مل سکا۔ واقعہ یوں بتایا جاتا ہے چندر کا 11سالہ بیٹا ،جس کا نام گودنا ہے، 24جون 2017کوایک کلومیٹر دور واقع مموتا کلاںگاؤں کے ششو مندر میں پڑھنے گیا تھا۔ لیکن گھر واپس نہیں آیا۔ اس نے ساسنی پولس سے رابطہ کیا ۔لیکن اسے وہاں سے کوئی مدد نہیں ملی۔
اس نے ناامید ہو کر خود ہی بیٹے کی تلاش شروع کر دی۔پیسہ پاس میں نہ ہونے کے باعث28جون کو وہ سائیکل پر ہی نکل پڑا۔بچے کو تلاش کرنے کے دوران ہی گاؤں والوں نے اسے بتایا کہ انہوں نے اس کے بچے کو ریلوے لائن پر کھڑی ایک ٹرین میں چڑھتے دیکھاتھا۔ چندر نے اسی ریلوے لائن کے سہارے چل کر بچے کو تلاش کرنا شروع کر دیا۔
وہ دن میں سائیکل لے کر گھومتا تھا اور لوگوں کو اپنے بچے کی فوٹو دکھا کر معلوم کرتا تھا۔ اب وہ آگرہ میںہے ۔ جہاں ایک سماجی کارکن اس کی مدد کر رہا ے اور اس نے اس کے بیٹے کے حوالے سے سوشل میڈیا میں اپیل پوسٹ کر دی ہے۔
اس کے بعد اب ساسنی پولس حرکت میں آگئی اور ستیش چندر کے گاؤں پہنچ گئی۔اور یکم دسمبر کو اغوا کی رپورٹ درج کر لی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Up farmer has covered 1500 km on his bicycle in search of his 11 year old son in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply