نکسل زدہ اضلاع میں پر امن پولنگ کے لئے نہایت سخت حفاظتی بندوبست

مرزاپور:اترپردیش میں نکسل متاثرہ اضلاع میں اسمبلی انتخابات کے ساتویں اور آخری مرحلے میں کل ہونے والی پولنگ کے لئے سیکورٹی کے وسیع بندوبست کئے گئے ہیں۔ پولیس ڈپٹی انسپکٹر جنرل رتن کمار شریواستو نے آج یہاں بتایا کہ نکسل متاثرہ مرزاپور، سون بھدر اور چندولی اضلاع میں پولنگ کے لئے سیکورٹی کے انتظامات انتہائی سخت کئے گئے ہیں۔ ووٹنگ کے پیش نظر سون بھدر ضلع کو چھونے والی چار پڑوسی ریاستوں بہار، جھارکھنڈ، مدھیہ پردیش اور چھتیس گڑھ کی سرحدوں کو سیل کر دیا گیا ہے۔ ان ریاستوں کی سرحدوں پر اپنے اپنے علاقے میں اس ریاست کی پولیس بھی تعینات ہے جو گاڑیوں کے تلاشی کے ساتھ مشتبہ افراد پر گہری نظر رکھے ہوئے ہے۔
مسٹر شریواستو نے بتایا کہ ناقابل رسائی مقامات پر ڈرون کیمرے اور ہیلی کاپٹر سے نگرانی کی جا رہی ہے۔نکسلیوں کے اثر والے بوتھوں پر سول پولیس کے ساتھ بڑی تعداد میں فوج کے جوانوں کی تعیناتی کی گئی ہے۔ دریاؤں اور دراندازی والے ممکنہ علاقوں میں خاص احتیاط برتی جا رہی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ جنگل، پہاڑوں اور دریاؤں کے ممکنہ راستوں پر خصوصی مستعدی برتی جا رہی ہے۔ ہیلی کاپٹر کے اترنے کے لئے ان علاقوں کے تھانوں پر ہیلی پیڈ بنایا گیا ہے۔ قابل غور ہے کہ اتر پردیش میں مرزاپور، سون بھدر اور چندولی سب سے زیادہ نکسل متاثرہ ضلع ہیں۔
اس میں سون بھدر محض ایک ضلع ہے جس کی سرحدیں چار ریاستوں بہار، جھارکھنڈ، مدھیہ پردیش اور چھتیس گڑھ سے ملی ہوئی ہیں۔ پولیس ڈپٹی انسپکٹر جنرل نے بتایا کہ سون بھدر ضلع میں اسمبلی کی چار نشستوں رابرٹس گنج، گھوراول، اوبرا اور دودھی پر نکسلیوں کا اثر ہے۔ مرزاپور ضلع کی مڑیکان، چھانبے اور چنار اسمبلی سیٹ کی 126 بوتھ نکسل متاثرہ کے طور پر منتخب کی گئی ہیں۔ ان علاقوں میں صبح سات بجے سے شام چار بجے تک پولنگ ہوگی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Up electionstight security has been put in place in seven districts in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply