ملک میں یکساں سول کوڈ فی الحال ضروری نہیں : لاءکمیشن

نئی دہلی:21ویں قانون کمیشن نے جمعہ کو اپنی3سالہ میعاد کے آخری روز پرسنل لا کے حوالے سے حتمی رپورٹ دینے کے بجائے ایک مشاورتی نوٹ جاری کیا ، جس میں ’بلا جواز ‘ طلاق ، نا ن و نفقہ اور شادی کے لئے اجازت کی عمر میں غیر یقینی اور عدم مساوات جیسے نئے نکتے اٹھائے گئے ہیں ۔

مشاورتی نوٹ میں کہا گیا ہے کہ ملک میں یکساں سول کوڈ کی فی الحال ضرورت نہیں ہے۔جسٹس (ریٹائرڈ) بی ایس چوہان کی صدارت والے لا کمیشن نے کہا کہ وقت کی قلت کے باعث یکساں سول کوڈ پر مکمل رپورٹ دینے کے بجائے مشاوتی نوٹ دینے کو ترجیح دی گئی ۔

185صفحاتی مشاورتی دستاویز میں کمیشن نے کہا کہ سیکولرزم ملک میں غالب اکثریت سے متصادم نہیں ہو سکتا۔سپریم کورٹ کے سابق جج جسٹس بی ایس چوہان کی سربراہی والے لا کمیشن نے کہا کہ ثقافتی تنوع سے اس حد تک سمجھوتہ نہ کیا جائے کہ وہی ملک کی علاقائی یکجہتی کے لیے خطرے کا باعث بن جائے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Uniform civil code not necessary says law commission in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply