آگرہ کے قریب فتح پور سیکری میں سوئس جوڑے پر نامعلوم بھیڑ کا حملہ، لہولہان کر کے سڑک پر ڈال گئے

نئی دہلی: اترپردیش کے شہر آگرہ کے قریب سیاحوں کے پسندیدہ ایک سیاحتی مقام فتح پور سیکری میں چار مسلح افراد پر مشتمل غنڈوں کی ایک ٹولی نے ایک سوئس جوڑے کا تعاقب کر کے اس پر لاٹھیوں اور پتھروں سے حملہ کر کے بری طرح لہو لہان اور جزوی طور پر بہرہ کر دیا۔ان کے ساتھ یہ حادثہ تاج محل دیکھنے کے ایک روز بعد پیش آیا۔
وزیر خارجہ سشما سوراج نے اس وحشیانہ حملہ پر حکومت اترپردیش سے جواب طلب کر لیا۔حملہ آوروں میں سے ایک کو گرفتار کر لیا گیا۔کوئنٹین جرمی کلارک اور اس کی گرل فرینڈ میری ڈوکز 30ستمبر کو سوئزرلینڈ کے لوسانے سے آگرہ آئے تھے اور وہاں سے فتح پور سیکری چلے گئے تھے۔ جہاں یہ حادثہ پیش آیا۔
کلارک کی کھوپڑی میں فریکچر ہے اور دماغ میں خون کا لوتھڑا جم گیا ہے ۔ جس کے علاج کے لیے اسے دہلی کے اپولو اسپتال میں داخل کر دیا گیا۔ڈاکٹروں کے مطابق اس کے کان کی ایک نس بھی متاثر ہوئی ہے۔ میری کے ہاتھ کی ہڈی ٹوٹ گئی ہے۔وزارت خارجہ کے افسران نے بھی اسپتال جا کر اس جوڑے کی عیادت کی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Two swiss tourists attacked in fatehpur sikri in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply