چھتیس گڑھ میں پولنگ کے دوران نکسلیوں کی فائرنگ میں سلامتی دستوں کے دو جوان زخمی

نئی دہلی: ابھی بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے صدر امیت شاہ کے اس دعوے کی کہ چھتیس گڑھ کی بی جے پی حکومت نے ریاست سے نکسلیوں کا خاتمہ کر دیا ہے، باز گشت تھمی بھی نہیں تھی کہ اسمبلی انتخابات کے عین پہلے مرحلہ کی پولنگ کے دوران بیجا پورکے پامید علاقہ میں ماؤ باغیو ں اور سلامتی دستوں کے درمیان تصادم میں کوبرا بٹالین کے دو جوان زخمی ہو گئے۔

یہ تصادم پیر کے روز دوپہر12بج کر 20منٹ پر ہوا۔ اس سے قبل صبح کے وقت ماؤ باغیوں نے کاٹے کلیان کے نینار گاؤں میں پولنگ سے تھوڑی ہی دیر پہلے بوتھ نمبر183سے700میٹرکے دوری پر آئی ای ڈی دھماکہ کیا جس میں سینٹرل ریزرو پولس فورس کی گشتی پارٹی بال بال بچ گئی۔اتوار کو ماؤباغیو ں نے آئی ای ڈی کا ہی دھماکہ کر کے باڈر سیکورٹی فورس کے ایک اہلکار کو ہلاک کیا تھا۔

جبکہ ایک دیگر واقعہ میں سلامتی دستوں کے ساتھ تصادم میں ایک ماؤ پرست مارا گیا۔ واضح ہو کہ ماؤ باغیوں نے ریاست میں اسمبلی انتخابات کے بائیکاٹ کی کال دی ہے اور گذشتہ17روز کے دوران کئی حملے کر چکے ہیں۔ان مین سے تین بڑے حملے تھے جن میں قمی نشری ادارے دور درشن کاایک کیمرہ مین سمیت، جو انتخابی مہم کی کوریج کرنے گیا تھا،13افراد ہلاک ہوئے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Two cobra jawans injured in encounter between security forces maoists in chhattisgarh in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News
What do you think? Write Your Comment