شیوسینا کے 25ممبران اسمبلی فرنویس حکومت سے حمایت واپس لینے کے حق میں نہیں

ممبئی:مہاراشٹر میں شیو سینا اور بی جے پی کے درمیان سیاسی تنازعہ نے اس وقت دلچسپ رخ اختیا رکرلیا جب شیوسیناکے تقریباً 25 ایم ایلیز نے مہاراشٹر کی بی جے پی حکومت سے حمایت واپس لینے کے پارٹی کی اعلیٰ کمان کا فیصلہ ماننےسے انکارکردیا ۔ شیو سینا کے 63 ایم ایلیز ہیں اور ان میں سے 25 ایم ایلیز نے واضح طور پر کہہ دیاہے کہ وہ فڑنویس حکومت کا ساتھ چھوڑنے کے حق میں نہیںہیں۔ پیر کے روز شیو سینا کے چیف ادھو ٹھاکرے کی ملاقات میں ان ارکان نے پارٹی کے کسی ایسے اقدام کے خلاف سخت احتجاج کیا۔
اس میٹنگ میں، پیٹرول اور ڈیزل کی بڑھتی ہوئی قیمت، موجودہ سیاسی حالات اور دیگر اہم مسائل پر تبادلہ خیال کیا گیا ہے ، مذکورہ اجلاس میں شیوسینا کے ممبران پارلیمنٹ، ایم ایل اے اور وزراءنے شرکت کی اور بتایا جاتا ہے کہ کئی لیڈران اور وزیروں کے درمیان تکرار بھی ہوئی۔ اس دوران تمام ایم ایل اے اور ارکان پارلیمنٹ کو میٹنگ ہال میں داخل کرنے سے قبل اپنے موبائل فون کو جمع کرنے کے لئے کہا گیا تھا، اگرچہ بعض ایم ایل اے موبائیل فون ہال میں لے جانے میں کامیاب رہے اور ذرائع ابلاغ کو پتہ چل گیا کہ میٹنگ کے دوران کیا ہوا۔
کئی معاملات میں شیوسینا میں آپسی تنازعات کا بھی پتہ چل گیا ہے۔ .ادھوٹھاکرے نے واضح کردیا تھا کہ اگر فڑنویس حکومت ریاست میں مناسب طریقے سے ترقی نہیں کرتی تو ان کی پارٹی حکومت سے حمایت واپس لینے پر غورکرسکتی ہے۔ جس پر مغربی مہاراشٹر کے بہت سے ایم ایلیز نے اس فیصلے کے خلاف سخت احتجاج کیا۔ ان ایم ایلیز نے کہا کہ ان کے پاس دوبارہ انتخابات میں مقابلہ کرنے کے لئے فنڈ نہیں ہے اور’منی پاور ‘کے ذریعہ بی جے پی سے مقابلہ نہیں کر سکتے ہیں۔ اجلاس میں شیو سینا کے وزرا اور ایم ایلیز کے درمیان تو تو میں میں بھی ہو گئی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Twenty five sena mlas opposed to pulling out of fadnavis govt in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply