سپریم کورٹ نے طلاق ثلاثہ مقدمہ میں عدالتی معاون بننے سلمان خورشید کی استدعا منظور کر لی

نئی دہلی:سپریم کورٹ نے تین طلاق، تعدد ازدواج اور حلالہ کے معاملے میں سینئر وکیل اور سابق وزیر قانون سلمان خورشید کی وہ استدعا قبول کر لی جس میں انہوںنے عدالتی معاون کے طور پر اپنی خدمات پیش کرنے کی پیش کش کی تھی۔ درخواست آج قبول کر لی۔ مسٹر خورشید نے چیف جسٹس جگدیش سنگھ کیہر کی صدارت والی بنچ کے سامنے اس معاملے کا خاص طور سے ذکر کرتے ہوئے کہا کہ وہ مسلمانوں میں تین طلاق، تعدد ازدواج اور نکاح حلالہ کے معاملوں میں غیر جانبدارانہ خیالات پیش کرنا چاہتے ہیں اور عدالت سے انہیں اس کے لئے اجازت چاہئے۔
ان کی عرضی پر عدالت عظمی نے کہا کہ اس معاملے میں تحریری طور پر مواد داخل کرنے کی میعاد ختم ہو چکی ہے۔ مسٹر خورشید نے عدالت سے صرف دو دن دینے کی درخواست کی اور کہا کہ وہ اس طے شدہ وقت کے اندر اندر ہی اپنا موقف تحریری طور پرپیش کر دیں گے۔ عدالت نے ان کی درخواست قبول کر لی۔ واضح رہے کہ اس معاملے کی پانچ رکنی آئینی بنچ 11 مئی سے باقاعدہ سماعت کرے گی۔

Title: triple talaq case sc permits salman khurshid to be amicus curiae | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply