طلاق ثلاثہ بل راجیہ سبھا میں آئندہ ہفتہ پیش کیا جائے گا

نئی دہلی: لوک سبھا میںتین طلاق پر پابندی عائد کرنے والا بل لوک سبھا میں منظور کر لیے جانے کے بعد اب آئندہ ہفتہ راجیہ سبھا میں پیش کیا جائے گا جہاں نرندر مودی حکومت کو اکثریت حاصل نہیں ہے ۔اسی دوران لوک سبھا میں طلاق ثلاثہ بل منظور کرنے کے مودی حکومت کے تاریخی کارنامہ کا خیر مقدم کرتے ہوئے خواتین نے کہا کہ لوک سبھا نے بل منظور کر کے بہت سی مسلم خواتین کا مستقبل محفوظ کر دیا ہے۔
واضح رہے کہ لوک سبھا میں منظور کردہ اس بل میں طلاق ثلاثہ پر پابندی عائد کرکے اسے قابل دست اندازی پولس اور ناقابل ضمانت جرم قرار ے دیا۔ اسکی خلاف ورزی کرنے والوں کے لیے تعزیرات ہند کے تحت3سال سزائے قید تجویز کی گئی ہے۔بل پیش کرتے ہوئے وزیر قانون روی شنکر پرساد نے کہا کہ آج کا دن تاریخی دن ہے۔لیکن قبل اس کے کہ بل پیش کیا جاتا حزب اختلاف کے کئی رہنماؤں نے اسے پیش کرنے کی یہ کہتے ہوئے مخالفت کی کہ یہ مطلق العنانہ اور خامیوں سے پر بل ہے۔
راشٹریہ جنتا دل،مجلس اتحاد المسلمین،بیجو جنتا دل، انڈین یونین مسلم لیگ اور انا ڈی ایم کے نے اس کی مخالفت کی۔اس کی مخالفت کرنے والے کانگریس اور بایاں بازو لیڈروں کو اس پر اس لیے بولنے کی اجازت نہیں دی گئی کیونکہ انہوں نے اس کے لیے نوٹس نہیں دیا تھا۔سماج وادی پارٹی کے سربراہ ملائم سنگھ یادو کو بھی اس کی مخالفت کرتے دیکھا گیا۔

Title: triple talaq bill to be tabled in rajya sabha next week it was passed in lok sabha yesterday | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply