جھارکھنڈ میں عورت کو برہنہ کر کے زدو کوب کرنے کے بعد گنجا کر کے پیشاب پینے پر مجبور کیا گیا

رانچی:جھارکھنڈ کے اسٹیل شہر بوکارو میں ایک انسانیت سوز کارروائی کرتے ہوئے ایک مشتعل بھیڑ نے ایک خاتون کو برہنہ کر کے اسے زدو کوب کیا اور پھر پیشاب پینے پر مجبور کیا۔
یہ لرزہ خیز واردات بوکارو شہر سے محض21کلومیٹر کے فاصلہ پر واقع ایک گاو¿ں میں جمعہ کی رات8بجے کی ہے جس میں ایک خاتون کے چال چلن پر شبہ ظا ہر کر کے اسے اس کے گھر سے اس کے شوہر کے سامنے گھسیٹتے ہوئے اسے ایک کمیونٹی سینٹر تک لے جایا گیا۔
بھیڑ اس قدر مشتعل تھی کہ اس نے عورت کو مارنا پیٹنا شروع کر دیا اور پھر اس کے جسم کے کپڑے تار تار کر دیے۔ اسی پر اکتفا نہیں کیا بلکہ ایک نائی کو بلا کر اس کے سر کے بال تک منڈوا دیے۔ اس کا شوہر اور وہ عورت رحم کی بھیک مانگتی رہی لیکن کسی نے ترس نہیں کھایا ۔یہاں تک کہ مہیشوری نام کا اصل ملزم ایک بوتل لایا اور اس میں پیشاب اور پاخانہ ملا کر اسے پینے پر مجبور کر دیا۔
پولس نے اس معاملہ میں 40سالہ مہیشور مانجی، 30سالہ سریندر ماجھی،30سالہ بھیم مانجھی اور 28سالہ گوپی چند مانجھی نام کے چار نوجوانوں کے خلاف تعزیرات ہند کی متعدد دفعات کے تحت ایف آئی آر درج کر لی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Tribal woman stripped tortured forced to drink human urine in jharkhand in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply