ماؤ باغیوں کا لیڈر آر کے ہماری تحویل میں نہیں ہے۔ حیدر آباد ہائی کورٹ میں آندھرا پولیس کا دعویٰ

حیدرآباد:آندھراپردیش پولیس نے حیدرآباد ہائی کورٹ میں سرکردہ ماؤ باغی لیڈر راما کرشنا عرف آرکے کی ،جو کافی عرصہ سے لاپتہ ہے ، بیوی اور دیگر کے اس الزام کی تردید کی کہ وہ اس کی تحویل میںہے۔آر کے کی بیوی سریشا اور دیگرنے ہائی کورٹ میں حبس بیجا کی ایک عرضی داخل کرتے ہوئے الزام لگایا کہ ما ؤ باغی لیڈر کو پولیس نے 24اکتوبر کو آندھراپردیش۔ اوڈیشہ سرحد پر ملکانگری کے جنگلاتی علاقہ میں پیش آئے انکاونٹر کے واقعہ میں پکڑ لیا۔
عرضی گزاروں نے ان کی مبینہ تحویل سے آر کے کو پیش کرنے کی پولیس کو ہدایت دینے اور اس معاملہ میںمداخلت کی عدالت سے خواہش کی ہے۔عرضی گزاروں کے دلائل کی سماعت کے بعد ہائی کورٹ نے آندھراپردیش حکومت کو ہدایت دی کہ وہ اس بات کویقینی بنائے کہ اگر ماؤ باغی لیڈران کی تحویل میں ہے تو ان کو کوئی نقصان نہیں پہنچنا چاہئے۔
جب عدالت میں اس معاملہ کی آج سماعت ہوئی تو آندھراپردیش کے وکیل نے جوابی حلف نامہ داخل کیا جس میں ویزاک رورل کے ایس پی راہل شرما نے جوابی عرضی داخل کرتے ہوئے آر کے کے ان کی تحویل میں ہونے کی سختی سے تردید کی۔انہوں نے نشاندہی کی کہ پولیس اس بات سے واقف نہیں ہے کہ آر کے انکاونٹر کے وقت کہاں تھا۔عدالت کو یہ بھی بتایاگیا ہے کہ آر کے کے خلاف رورل ویزاک پولیس حدود میں درج 33معاملات سمیت 40معاملات درج ہیں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Top maoist rk not in our custody andhra police tells hyderabad hc in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply