دہلی میں ہلاک تینوں کمسن بہنوں کو باپ نے نامعلوم دوا پلائی تھی

نئی دہلی: مشرقی دہلی کے منڈاو¿لی علاقہ میں ایک ہی کنبہ کی تین چھوٹی بچیوں کی پراسرار حالات میں ہوئی موت کی وجوہ جاننے کے لیے دہلی حکومت نے جو مجسٹریٹی تحقیقات کرائی تھی اس سے یہ سنسنی خیز انکشاف ہوا ہے کہ ان بچیوں کی موت بھوک سے نہیں بلکہ انہیں کوئی دوا کھلانے سے ہوئی تھی۔

گہرائی سے کی گئی تحقیقات سے یہ علم ہوا کہ 23جولائی کی نصف شب میں بچیوں کے باپ منگل سنگھ نے گرم پانی میں کوئی نامعلوم دوا گھول کر پلائی تھی۔اور دوسرے روز صبح ہی منگل سنگھ گھر سے چلا گیا اور پھر واپس نہیں آیا۔

یہ بھی کہا جارہا ہے کہ ان بچیوں کو پیٹ میں انفیکشن ہو جانے سے قے دست بھی ہو رہے تھے لیکن انہیں کوئی او آر ایس یا مناسب دوا نہیں دی گئی تھی جس کے باعث ان کے جسم میں پانی کی شدید قلت ہو گئی تھی۔

پوسٹ مارٹم رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ اگرچہ ان بچیوں میں غذائیت کی کمی تو تھی لیکن ان کو روزانہ تھوڑا بہت کھانے پینے کو مل ضرور رہا تھا۔ادھر پولس کی رپورٹ میں اس بات کا انکشاف ہوا کہ بڑی بچی کے نام سے بینک میں1805روپے جمع تھے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Three delhi sisters who died of starvation were fed unknown medicine by their father report in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply