جی ایس ٹی پر سیاست نہ کی جائے، مہنگائی نہیں بڑھے گی، لوگوں کو آسان ٹیکس نظام کا فائدہ ملے گا: وزیر مالیات

نئی دہلی : وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے اشیا اور سروس ٹیکس (جی ایس ٹی) کے سلسلے میں کسی قسم کی سیاست نہ کئے جانے کی اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے مہنگائی نہیں بڑھے گی اور لوگوں کو آسان ٹیکس نظام کا فائدہ ملے گا۔ مسٹر جیٹلی نے آج یہاں ایک ٹیلی ویژن چینل کے پروگرام میں حصہ لیتے ہوئے لوگوں کے جی ایس ٹی کے سلسلے میں اٹھائے جانے والے تمام شبہات کو دور کیا۔ انہوں نے کہا کہ نیا ٹیکس نظام سے ملک میں 17 قسم کے ٹیکس ختم ہو جائیں گے اور تمام ریاستوں میں سامان کا یکساں نرخ ہوگا۔ آزادی کے بعد سب سے بڑی اقتصادی بہتری کے طور پر دیکھا جا نے والا جی ایس ٹی یکم جولائی سے لاگو ہو رہا ہے۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے جی ایس ٹی کو ’گیم چینجر ‘ بتایا ہے۔ مسٹر جیٹلی نے کہا کہ سب کی شراکت اور تعاون کے بعد جی ایس ٹی کا اطلاق ہو رہا ہے اور اس پر سیاست نہیں ہونی چاہیے۔
جی ایس ٹی کے نفاذ سے مہنگائی نہیں بڑھے گی بلکہ لوگوں کو آسان ٹیکس نظام کا فائدہ ملے گا۔ اس کے لاگو ہونے سے کچے بل کا کھیل ختم ہو جائے گا۔ چھوٹے اور درمیانے صنعت کاروں، کاروباریوں اور مرچنٹس سب کے لئے تفصیلات بھرنا اور تخمینہ لگانا آسان ہو جائے گا۔ اس سے کاروبار مضبوط ہونے کے ساتھ ہی روزگارپیدا کرنے میں بھی مدد ملے گی۔ مسٹر جیٹلی نے کہا کہ نیا ٹیکس نظام کے نافذ ہونے سے بالواسطہ ہی نہیں براہ راست ٹیکس وصولی پر بھی اثر پڑے گا۔ نیا نظام میں سب سے بلند شرح 28 فیصد کچھ چیزوں پر ہی ٹیکس لگے گا۔ پرانے نظام میں 31 سے لے کر 33 فیصد تک لگتا تھا۔ جی ایس ٹی کونسل نے اشیاپر ٹیکس کی کیا شرح ہو اس سلسلے میں ملنے والے تجاویز کے بعد وسیع مشاورت کے بعد ہی ایک ایک چیز کے لیے سلیب مقرر کیا ہے۔ پورے ملک میں شرح پر رضامندی قائم ہو گئی ہے۔
تمام ریاستوں اور مرکز نے کس چیز پر کتنا ٹیکس لگایا جائے یہ مل کرطے کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ رئیل اسٹیٹ کے شعبے پر جی ایس ٹی کا خاصا اثر پڑے گا۔ ملک میں کالے دھن کا بڑا حصہ اسی سیکٹر میں لین دین ہوتا ہے۔ جی ایس ٹی کونسل اس کے لیے اگلے سال کوئی مؤثر طریقہ نکالنے پر کام کر رہی ہے۔ ریاستوں نے پٹرولیم مصنوعات اور شراب کے ٹیکس کی شرح کو چھوڑنے سے انکار کیا ہے جس کی وج? سے جی ایس ٹی میں ان پر کوئی فیصلہ نہیں ہو پایا ہے۔ کونسل کے پاس آگے چل کر ان کا ٹیکس طے کرنے کا حق حاصل ہو گا۔ 1000اور پانچ سو روپے کے نوٹوں کی منسوخی سے بینکوں میں آنے والی رقم کے اعداد و شمار دینے میں ہونے والی تاخیر کیلئے وزیر خزانہ نے کہا کہ ریزرو بینک کونوٹ گننے کے عمل میں زیادہ وقت لگ رہا ہے۔ لاکھوں کروڑ روپے کے نوٹ گننے میں کافی وقت لگتا ہے۔ ریزرو بینک جدید مشینیں اور عمل سے نوٹوں کی گنتی کر رہا ہے اور جلد ہی متعلقہ افسران اس کے عداد و شمار جاری کر دیں گے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: There should be no politics on gst launch arun jaitley in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News
Tags: ,

Leave a Reply