گؤ کشی معاملہ میں مقتول اخلاق کے لواحقین کے خلاف ایف آئی آردرج کرانے کا مطالبہ

دادی(اتر پردیش):گھر میں گائے کا گوشت کھانے اور ذخیرہ کرنے کی افواہ پر دادری کے گاؤں بسہاڑہ میں محمد اخلاق نام کے ایک بزرگ شخص کو پیٹ پیٹ کر ہلاک کردینے کے افسوسناک واقعہ کے9ماہ بعد اس معاملہ کو اس وقت پھر تازہ کر دیا گیا جب اس کے گاؤں کے سیکڑوں افراد نے مقتول اخلاق کے رشتہ داروں کے خلاف تھانہ میں گؤ کشی کا معاملہ درج کرانے کا مطالبہ منوانے کے لیے مہا پنچایت کر نے کی تجویز رکھی۔
تاہم اس مہا پنچایت کو روکنے کے لیے دادری میں دفعہ 144نافذ کر دی گئی ہے جس کے تحت دادری کے کسی بھی علاقہ میں پانچ یا اس سے زائد افراد بیک وقت جمع نہیں ہوسکتے۔دادری دہلی سے 50کلومیٹر کے فاصلہ پر واقع ہےاور پولس و انتظامیہ جو جاٹوں کی ریزرویشن کی تازہ تحریک سے پہلے ہی پریشان ہے اس نئی افتاد نے اس کی درد سری اور بھی بڑھا دی۔
یاد رہے کہ 28ستمبر کو ہونے والے اس سانحہ کے بعد جو گوشت جانچ کے لیے لیباریٹری میں بھیجا گیا تھا اس کی رپورٹ میںکہا گیا تھا کہ وہ نمونہ گائے کا نہیں بلکہ کسی بکرے یا میمنے کا ہے۔ لیکن 9ماہ کے بعد گذشتہ ہفتہ ایک نئی رپورٹ آئی کہ وہ گوشت جو جانچ کے لیے بھیجا گیا تھا گائے یا پھر بچھڑے کا ہے۔ اس متضاد رپورٹ کے فوراً بعد ہی اس معاملہ نے نیا رخ اختیار کرلیا۔ دریں اثنا اخلاق کے گھر والوں کے وکیل نے کہاکہ وہ اس نئی رپورٹ کو چیلنج کریں گے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Tension prevailed in dadri after report says it was beef in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply