گیان پیٹھ ایوارڈ یافتہ تیلگو شاعر ومصنف سی نارائن ریڈی انتقال کر گئے

حیدرآباد : مشہور تیلگو شاعر، مصنف اور گیان پیٹھ ایوارڈ یافتہ ڈاکٹر سی نارائن ریڈی کا آج یہاں ایک ہسپتال میں انتقال ہو گیا۔ وہ 85 برس کے تھے۔ کچھ عرصہ سے بیمار مسٹر ریڈی کو آج صبح حالت بگڑنے پر بنجارہ ہلز علاقے کے ایک نجی اسپتال لے جایا گیا، جہاں ڈاکٹروں نے انہیں مردہ قرار دے دیا۔ ان کی پیدائش 29 جولائی 1931 کو آندھرا پردیش ( تلنگانہ) کے کریم نگر ضلع کے ہنماجی پیٹ گاؤں میں ہوئی تھی۔ انہوں نے اپنے کیریئر کا آغاز ایک استاد کے طور پر کیا تھا اور وہ سکندرآباد آرٹ و سائنس کالج اور نظام کالج میں استاد رہے تھے۔
اس کے بعد وہ عثمانیہ ونیورسٹی میں تیلگو زبان کے نصابی سربراہ رہے۔ ڈاکٹر ریڈی نے بہت سی تیلگو فلموں کے لیے یادگار نغمہ لکھے ہیں۔ انہوں نے 1953 میں ’نوننا پورو‘ نام سے پہلی کتاب لکھی تھی۔ ان کا تیلگو شعری مجموعہ’وشوامبرا‘ کافی مشہور ہوا تھا اور اس کے لیے انہیں ملک کا اعزازی ادبی گیان پیٹھ ایوارڈ سے نوازا گیا تھا۔اس کتاب کا انگریزی اور ہندی میں ترجمہ کیا گیا تھا۔ ڈاکٹر ریڈی پدم شری اور پدم بھوشن ایوارڈ سے بھی نوازے جا چکے ہیں۔ وہ راجیہ سبھا رکن بھی ر ہ چکے ہیں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Telugu writer and poet c narayan reddy passes away in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply