سپریم کورٹ نے سہراب الدین انکاؤنٹرکیس کے جج کی پرسرار موت کو نہایت سنگین معاملہ بتایا

نئی دہلی: سہراب الدین انکاؤنٹر کیس کی سماعت کرنے والے خصوصی سی بی آئی جج بی ایچ لویا کی پراسرار موت کے معاملہ کو نہایت سنگین معاملہ قرار دیتے ہوئے اس کی آزادانہ تحقیقات کرانے کی استدعا پرحکومت مہاراشٹر سے جواب مانگا ہے۔
عدالت عظمیٰ نے کہاکہ معاملہ یکطرفہ کارروائی کے بجائے دو فریقی سماعت کا متقاضی ہے۔جسٹس ارونمشرا اور جسٹس ایم ایم شانتا نگودار نے سرکاریوکیل نشانت آر کٹنیشورکر کو ہدایت کی کہ وہ اس معاملہ پر15جنوری تک جواب داخل کریں۔
سماعت کے آغاز میں سینیئر وکیل دشیانت دوے نے بمبئی وکلاءایسوسی ایشن کی نمائندگی کرتے ہوئے کہا کہ ہائی کورٹ چونکہ یہ معاملہ دیکھ رہی ہے اس لیے سپریم کورٹ کا اس معاملہ کی سماعت نہیں کرنی چاہئے کیونکہ اس سے ہائی کورٹ میں جاری سماعت پر اثر پڑے گا۔
جس پر بینچ نے کہا کہ وہ عذر داریوں کو پڑھے گی اور اٹھائے گئے اعترضات پر بھی غور کرے گی۔ایک دوسرے عرضی گذار کانگریس کے تحسین پونہ والا نے کہا کہ یہ ایک پراسرار موت کا معاملہ ہے اس لیے اس کی تحقیقات کرانے کی ضرورت ہے۔

Title: supreme court seeks judge loyas postmortem report says matter very serious | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply