رافیل سودے کی عدالتی نگرانی میں تحقیقات کرانے کے معاملہ پر سپریم کورٹ کافیصلہ محفوظ

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے فرانس سے36 رافیل جنگی طیاروں کی خریداری کے معاملہ کی عدالت کی نگرانی میں تحقیقات کرانے کی استدعا کرنے والی عرضیوںپر فیصلہ محفوظ کر لیا۔

چیف جسٹس رنجن گوگوئی کی سربراہی میں تین ججی بنچ نے جس کے دیگر دو جج جسٹس ایس کے کول اور جسٹس کے ایم جوزف تھے36رافیل جنگی طیاروں کی، جو ہندوستان فرانس سے لے رہا ہے، قیمتوں کی تفصیل سے متعلق معاملہ کی تحقیقات کی۔ اس معاملہ پر سپریم کورٹ میں5گھنٹے تک بحث چلی جس میں مرکز ، عرضی گذاروں اور استغاثوں کے بیانات سنے گئے۔

واضح ہو کہ مرکزی حکومت رافیل سودے کی قیمتوں کے حوالے سے تفصیل پہلے ہی دو شنبہ کو سربمہر لفافہ میں عدالت کو سونپ چکی ہے۔حکومت نے عدالت اور عرضی گذاروں کو 36رافیل طیاروں کی خریداری کا آرڈر دینے کے لیے فیصلہ سازی عمل میں لیے گئے اقدامات کی تفصیلات پر ایک14صفحاتی دستاویز تھمائی۔

تاہم اس نے عرضی گذاروں کو قیمتوں کی تفصیل بتانے سے انکار کر دیا۔ اسی دوران عدالت عظمیٰ کے اس موقف سے عرضی گذاروں کو زبردست دھچکا لگا کہ عرضی گذاروں کورافیل طیاروں کی قیمتوں کی تفصیل بتانے کی فی الحال کوئی ضرورت نہیں ہے۔

قیمتوں پربحث تبھی ہوگی جب عدالت اس کی اجازت دے گی۔مرکز بھی سپریم کورٹ میں یہ سخت موقف اختیار کر چکا تھا کہ رافیل سودے کی قیمتوں کے حوالے سے تحقیقات قومی سلامتی کا مسئلہ ہے اور وہ عدالت کے حیطہ اختیار میں نہیں لایا جا سکتا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Supreme court reserves verdict in rafale case on pleas demanding probe into the jet deal in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News
What do you think? Write Your Comment