ہند پاک سندھ طاس معاہدے پر فوری سماعت کرنے سے سپریم کورٹ کا انکار

نئی دہلی:سپریم کورٹ نے مفاد عامہ میں دائر کی گئی اس عذر داری کی جلد سماعت سے انکار کر دیا جس میں ہند پاک سندھ طاس معاہدے کو غیر آئینی قرار دینے کی استدعا کی گئی ہے۔
چیف جسٹس ٹی ایس ٹھاکر اور جسٹس اے ایم کھانویلکر پر مشتمل بنچ نے کہا کہ یہ معاملہ فوری سماعت کا ہر گز متقاضی نہیں ہے۔وقت آنے پر اس کی بھی سماعت کی جائے گی۔
اس معاملہ پر ذاتی طور پر مفاد عامہ پٹیشن داخل کرنے والے وکیل ایم ایل شرما نے یہ کہتے ہوئے اس کی فوری سماعت چاہی تھی کہ ہ غیر آئینی ہے کیونکہ اس پر آئینی لائحہ عمل کے مطابق دستخط نہیں کیے گئے تھے لہٰذا اس معاہدہ کو باطل قرار دیا جانا چاہئے۔جس پر بنچ نے کہا کہ سیاست کو بالائے طاق رکھیے اور جب وقت آئے گا اس کی سماعت ہو جائے گی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Supreme court refuses urgent hearing on pil indus waters treaty in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply