کلکتہ ہائی کورٹ کے جج کے دماغ کا طبی معائنہ کرایا جائے :سپریم کورٹ

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے حکم جاری کیا ہے کہ کلکتہ ہائی کورٹ کے جسٹس سی ایس کرنن کی دماغی حالت کے معائنہ کے لیے میڈیکل بورڈ تشکیل د یا جائے ۔ چیف جسٹس کے ایس کیہر کی صدارت میں سات ججی بنچ نے معاملہ کی سماعت کے دوران یہ حکم دیا۔ عدالت نے کہا کہ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ جسٹس کرنل کی ذہنی حالت ٹھیک نہیں ہے اور وہ بذات خود اپنا موقف پیش کرنے کی حالت میں نہیں لگ رہے ہیں۔ عدالت نے سرکاری ڈاکٹروں کو ایک ٹیم کی جانب سے جسٹس کرنن کی ذہنی حالت کی جانچ کا حکم دیا۔
آئینی بنچ نے کہا ہے کہ ڈاکٹروں کی ٹیم چار مئی کو جسٹس کرنن کی میڈیکل جانچ کرے گی اور اس دوران مغربی بنگال کے ڈائرکٹر جنرل سیکورٹی کا پورا بندو بست کریں گے۔ عدالت نے طبّی بورڈ کو آٹھ مئی یا اس سے قبل اپنی رپورٹ سونپنے کا حکم دیا ہے۔ جسٹس کرنن نے پچھلے دنوں آئینی بنچ کے ارکان کو یکم مئی کو اپنے سامنے پیش ہونے کا حکم دیاتھا۔ اس حکم کے مدنظر آئینی بنچ کو آج اچانک سماعت کرنی پڑی۔ اٹارنی جنرل مکل روہنگی نے دلیل دی کہ جسٹس کرنن کا حکم سپریم کورٹ کے 8 فروری کے اس حکم کا ذکر ہے جس میں کہاگیاتھا کہ وہ توہین عدالت کے معاملہ کے نمٹنے تک عدالتی اور حکومت کے کاموں سے علاحدہ رہیں گے۔ معاملہ کی اگلی سماعت 9 مئی کو ہوگی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Supreme court orders medical examination of calcutta hc judge c s karnan in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply