جلی کٹو قانون کی تنسیخ کی عرضی پر سپریم کورٹ سے تمل ناڈو حکومت کو نوٹس جاری

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے جانوروں کے ساتھ اچھا سلوک کرنے کی تحریک چلانے والی تنظیم پیپل فار اتھیکل ٹریٹمنٹ آف انیملز (پیٹا ) کی جانب سے اس عذر داری پر حکومت تمل ناڈو کو نوٹس جاری کر دیا جس میں تمل ناڈو اسمبلی میں منظور کر دہ نئے جلی کٹو بل کی تنسیخ کی استدعا کی گئی تھی۔
اس نئے بل سے بجار وں (سانڈ) کو ایک بار پھر” تفریحی جانوروں“ میں شمار کر لیا گیا جس سے 2014میں سپریم کورٹ سے پابندی عائد کر دیے جانے کے باوجود ثقافت اور روایت کے نام پر بجاروں سے لڑ نے والے مقبول کھیل جلی کٹو کو پھر سے شروع کرنے کی راہ ہموار ہو گئی ہے۔
عذر داری داخل کرنے والی تنظیم نے ایک وہ ویڈیو بھی عدالت میں پیش کی ہے جس میں دکھایا گیا ہے کہ بجاروں کے ساتھ کس قدر بے رحمانہ سلوک کیا جاتا ہے۔
چیف جسٹس دیپک مشرا کی سربراہی والی ایک بنچ نے حکومت کو اس نوٹس کا جواب دینے کے لیے چار ہفتوں کی مہلت دی ہے۔ عدالت نے اس عذر داری کو بھی جلی کٹو قانون کے خلاف دائر دیگر درخواستوں میں ملا دیا۔

Title: supreme court issues notice to tn govt over peta plea against jallikattu | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply