دہشت گردی کے الزام میں16برس سے جیل میں قید مسلم شخص کو سپریم کورٹ نے ضمانت پررہا کر دیا

ممبئی:دہشت گردی کے الزامات کے تحت گذشتہ16سالوں سے جیل کی سلاخوں کے پیچھے بامشقت عمر قید کی سزا کاٹ رہے بنگلور کے مسلم شخص کو سپریم کورٹ نے مشروط ضمانت پر رہا کیئے جانے کے احکامات جاری کیئے ، یہ اطلاع آج یہاں ممبئی میں ملزم کو قانونی امداد فراہم کرنے والی تنظیم جمعیت علماء مہاراشٹر (ارشد مدنی) قانونی امداد کمیٹی کے سربراہ گلزار اعظمی نے دی۔
گلزار اعظمی نے بتایا کہ گذشتہ روز سپریم کورٹ آف انڈیا کی دو رکنی بینچ کے جسٹس پیناکی چندرا گھوس اور جسٹس روہیتن فالی نریمن نے 2000میں کرناٹک کے مختلف شہروں میں ہوئے چار بم دھماکہ معاملے میں نچلی عدالت سے عمر قید کی سزا پانے والے سید عبدالقادر جیلانی کو پچاس ہزار روپئے کے ذاتی مچلکہ پر ضمانت پر رہا کیے جانے کے احکامات جاری کیے۔
ملزم کی ضمانت عرضداشت پر ایڈوکیٹ کامنی جیسوال نے بحث کی اور عدالت کو بتایا کہ ملزم گذشتہ 16 سالوں سے جیل میں قید ہے نیز ملزم نے نچلی عدالت کے فیصلہ کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل داخل کی ہے لیکن اس پر ابھی تک سماعت شروع نہیں ہوسکی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Supreme court grants bail to bangloer church blast accused in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply