ڈینگی اور چکن گنیا امراض پر سپریم کورٹ کی دہلی حکومت سے جواب طلبی

نئی دہلی:سپریم کورٹ نے دہلی میں ڈینگو اور چکن گونیا سے ہونے والی اموات کے معاملے میں دہلی حکومت سے آج جواب طلب کیا۔ جسٹس مدن بی لوکر اور جسٹس ڈی وی چندر چوڑ کی بنچ نے ڈاکٹر انل متل کی عرضی پر از خود نوٹس لیتے ہوئے دہلی حکومت کو نوٹس جاری کیا۔ عدالت نے سماعت کے دوران سختی دکھاتے ہوئے سرکاری میکنزم کو پوری طرح ناکام بتایا۔
عدالت عظمی نے دہلی حکومت کے ساتھ دہلی میونسپل کارپوریشن اور نئی دہلی میونسپل کونسل کو بھی نوٹس دیا ہے۔ اگلی سماعت جمعہ یعنی 30 ستمبر کو ہوگی۔ عرضی میں یہ کہا گیا ہے کہ دہلی حکومت اور ایم سی ڈی اس سلسلے میں ٹھوس قدم اٹھانے میں ناکام رہے ہیں۔اس کی وجہ سے اسکولی بچوں سمیت بڑے پیمانے پر لوگ بیمار ہورہے ہیں۔ کئی لوگوں کی اس کی وجہ سے موت ہوچکی ہے۔ خیال رہے کہ ڈینگو چکن گونیا کے بڑھتے معاملات کے مدنظر ڈاکٹر متل نے مفاد عامہ کی عرضی دائر کی تھی۔
عرضی میں کہا گیا ہے کہ دہلی کوڑے کے ڈھیر میں تبدیلی ہوتی جارہی ہے اور ایجنسیاں اس پر کوئی کام نہیں کررہی ہیں۔ ہزاروں لوگ ڈینگو اور چکن گونیا کا شکار ہوئے ہیں۔ عرضی میں کہا گیا ہے کہ چکن گونیا سے نمٹنے کے لئے کوئی سائنسی علا ج نہیں ہے جو موجودہ طبی نظام ہے وہ چکن گونیا کو روکنے کے لئے اہل نہیں ہے۔ عرضی میں یہ نکتہ بھی پیش کیا گیا ہے کہ لیفٹننٹ گورنراور دہلی حکومت کے آپسی جھگڑے کے باعث ایجنسیاں کام نہیں کرررہی ہیں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Supreme court give notice to delhi governments on dengue in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply