پٹھان کوٹ حملہ مرکزی حکومت اور انٹیلی جنس ایجنسیوں کی غفلت وکمزوری کا شاخسانہ

نئی دہلی: وزارت داخلہ کی اسٹینڈنگ کمیٹی نے 2جنوری کو پٹھان کوٹ میں واقع ہندوستانی فضائیہ کے اڈے پر کیے گئے دہشت گردانہ حملہ پر مرکز کو سخت ہدف تنقید بنایا اور کہا کہ اگر مرکز سنجیدہ ہوتا اور انٹیلی جنس ایجنسیوں نے مناسب ڈھنگ سے تیاری کی ہوتی تو صورتحال پوری طرح مختلف ہوتی۔اسٹینڈنگ کمیٹی کے چیرمین پردیپ بھٹاچاریہ نے کہا کہ خطرہ کو بروقت بھانپ لینے اور سرعت سے ان سے نمٹنے کے لیے سیکورٹی ایجنسیوں کی تیاریاں بہت ناقص تھیں ۔
بھٹاچاریہ نے کہا کہ کمیٹی یہ سمجھنے سے قاصر ہے کہ آخر دہشت گردانہ حملہ کے پیشگی اطلاع ملنے کے باوجود دہشت گرد ایر بیس میں داخل کیسے ہوئے۔انہوں نے کہا کہ پٹھانکوٹ فضائیہ میں تعینات افسروں سے ہم نے طویل بات چیت کی۔ انہوں نے بتایا کہ انہیں ایسی کوئی اطلاع نہیں تھی کہ ان کے ا یر بیس پر حملہ ہوگا۔ہاں انہیں علی الصباح اس کی اطلاع ملی لیکن وہ بھی پنجاب سے نہیں بلکہ دہلی فضائیہ سے ملی تھی۔ یہ کیسے ہوا؟ دہلی ایر فورس کو کس نے اطلاع دی۔ یہ قابل ذکر باتیں ہیں جن کی تحقیقات ضروری ہے۔

Title: standing committee of ministry of home affairs pulled intelligence agencies | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply