اسپیکر کا تمل ناڈو کے گورنرکا معاملہ پارلیمنٹ میں اٹھانے کی اجازت دینے سے انکار

نئی دہلی: لوک سبھا اسپیکر سمترا مہاجن نے انا ڈی ایم کے کے ارکان کو تمل ناڈو میں پیدا ہوئے سیاسی بحران کے تناظر میں گورنر ودیا راؤ کا معاملہ آج ایوان میں اٹھائے جانے کی اجازت دینے سے انکار کر دیا۔ صبح ایوان کی کارروائی شروع ہونے کے دوران بھی انا ڈی ایم کے کے ارکان نے تمل ناڈو میں جلد حکومت بحالی اور گورنر ودیا راو کے رول کے سلسلے میں ایوان میں نعرے بازی کی جس کی وجہ سے ایوان کی کارروائی ساڑھے گیارہ بجے تک ملتوی کرنی پڑی تھی۔
اس کے بعد وقفہ صفر کے دوران ارکان نے دوبارہ یہ معاملہ اٹھانا چاہا لیکن محترمہ مہاجن نے یہ کہتے ہوئے اس کی اجازت نہیں دی کہ آئینی عہدے پر بیٹھے ہوئے کسی شخص سے وابستہ معاملے کو لوک سبھا میں نہیں اٹھایا جا سکتا۔ محترمہ مہاجن نے اس ضمن میں انا ڈی ایم کے رکن پی وینوگوپال کی جانب سے پیش کردہ تحریک التوا کی تجویز کے نوٹس پر یہ رولنگ دی۔
پارٹی کے مبینہ دباؤ میں آکر7 فروری کو عہدے سے مستعفی ہونے والے تمل ناڈو کے کارگزار وزیر اعلی او پنیرسیلوم کے پارٹی جنرل سکریٹری ششی کلا کے خلاف کھلی بغاوت پر اتر آنے کے بعد سے ریاست میں سیاسی بحران مزید بڑھ گیا ہے۔ گورنر ودیا راؤ بھی ریاست میں موجود نہیں ہیں، ایسی صورت میں انا ڈی ایم کے کے ساتھ ہی ریاست میں نئی حکومت کی تشکیل کو لے کر بھی زبردست غیر یقینی صورتحال پیدا ہو گئی ہے۔

Title: speaker rejects aiadmk notice | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply