پرانے پانچ سو روپیہ کا نوٹ لینے سے میڈیکل اسٹور کے انکار کے باعث16سالہ لڑکے کی موت

کلکتہ:ملک بھر میں پانچ سو اور ہزاروپے کے نوٹ پر پابندی کی وجہ سے ملک کی عوام پریشان ہیں آج کلکتہ میں ایک میڈیکل اسٹور نے ایمرجنسی میں زیر علاج ایک مریض کیلئے دوا لینے گئے ایک شحص سے پرانے نوٹ لینے سے انکار کرنے کے بعد دوائی نہیں ملنے کی وجہ سے ایک لڑکے کی موت ہوگئی ہے۔
16سالہ سیبا داس کو آر جی کار میڈیکل کالج و اسپتال میں شدید بخار آنے کی وجہ سے جمعرات کو اسپتال کے ایمرجنسی کے شعبے میں داخل کرایا گیا تھا۔میڈیکل اسٹوروں نے مریض کے اہل خانہ سے پانچ سو کے نوٹ لینے سے انکار کردیا۔جب کہ ان کے پاس صرف پانچ سو کے پرانے نوٹ تھے۔ مہلوک لڑکے کے رشتہ شمبھوداس نے کہا کہ وہ 180روپیہ کی دوا لینے کیلئے کئی میڈیکل اسٹوروں کے پاس گئے مگر کوئی بھی 500روپیہ کے پرانے نوٹ لینے کو راضی نہیں ہوا۔
جب کہ مریض کی حالت بہت ہی زیادہ خراب تھی۔ ج واضح رہے کہ میڈیکل اسٹور، سرکاری و پرائیوٹ اسپتالوں کو پرانے نوٹ لینے کی ہدایت دی گئی ہے۔میڈیکل اسٹور کے مالک نے اس الزام کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے مریض کے رشتہ دار کو ادھار ہی دوا لے جانے کیلئے کہا تھا مگر وہ تیار نہیں ہوئے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Sixteen year old boy dies after chemist refuses to accept 500 note in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply