بہار کے صحافی کے قتل کیس میں اصل ملزم و شہاب الدین کے معتمد خاص کی خود سپردگی

پٹنہ:بہار کے سینیر جرنلسٹ راج دیو رنجن کے قتل کے کلیدی ملزم اورآر جے ڈی کے سابق ممبر پارلیمنٹ شہاب الدین کے قریبی ساتھی اظہر الدین بیگ عرف لڈن میاں نےجمعرات کی صبح خود کو سیوان میں چیف جوڈیشیل مجسٹریٹ کی عدالت میں پیش کر دیا۔
سیوان کے پولس سپرنٹنڈنٹ سوربھ کمار شاہ نے کہا کہ پولس نے ضلع کے تمام راستوں کی ناکہ بندی کر کے زبردست تلاشی مہم چھیڑ کر لڈن کو،جو 13مئی کوقتل والے دن سے ہی گرفتاری سے بچ رہا تھا،خود سپردگی پر مجبور کر دیا۔
پولس نے اسے عدالت میں پیش کر کے اس سے پوچھ گچھ کرنے اور شواہد جمع کرنے کے لیے اس کا 15روز کا ریمانڈ مانگا۔ اسی کیس میں ایک ہفتہ پہلے 5دیگر افراد کو بھی گرفتار کر چکی ہے جن میں روہت کمار نام کا ایک شخص بھی شامل ہے جس نے رنجن کو قتل کرنے کا اعتراف کیا ہے۔
42سالہ رنجن کو گذشتہ ماہ سیوان ریلوے اسٹیشن پر ایک ہاتھ کے فاصلہ سے گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا تھا۔رنجن ہندی روزنامہ ہندوستان کے بیورو چیف تھے۔لڈن کو رنجن کے قتل سے 15روز پہلے ہی سیوان جیل سے رہا کیا گیا تھااور قتل کے دو گھنٹے بعد ہی اپنے بیوی بچوں کے ساتھ فرار ہو گیا تھا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: siwan journalist murder case prime suspect laddan mian surrenders in Urdu | In Category: ہندوستان  ( india ) Urdu News

Leave a Reply