افغان سکھوں کی پنجاب کے کیپٹن سے فریاد

نئی دہلی:افغانستان کے25 سکھ خاندانوں نے پنجاب میں کیپٹن امریندر سنگھ کی قیادت والی کانگریس حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ چونکہ وہ اپنی روز مرہ کی ضروریات پوری کرنے سے قاصر ہیں اس لیے انہیں ہندوستانی شہریت اور رہنے کے لیے مکانات دیے جائیں۔

یہ سکھ خاندان ،جو قبول اسلام کے لیے متواتر دباؤڈالے جانے سے عاجز ہو کر چند سال پہلے افغانستان کے دارالخلافہ کابل سے ہندوستان نقل مکانی کر گئے تھے فی الحال لدھیانہ میں رہائش پذیر ہیں۔ ان کنبوں میں سے ایک کنبہ کے سربراہ سمی سنگھ نے کہا کہ وہ مجموعی طور پر40کنبوں کے ساتھ آیا تھا لیکن اب خاندان ہی رہ گئے ہیں ۔

اس نے کہا کہ اس کے پانچ بچوں میں سے ایک بیٹی مناسب طبی امداد بہم نہ پہنچائے جانے کے باعث انتقال کر گئی۔سمی نے کہا کہ اس کو فی الحال گذر اوقات کےلیے آٹو رکشہ چلانا پڑ رہا ہے۔

جبکہ وہ افغانستان میں اپنا خود کا بزنس چلاتا تھا۔لیکن اسے اور اس کے بیوی بچوں پر وہاں کے لوگ مسلمان بن جانے کا دباؤ ڈالتے رہتے تھے۔یہاں تک کہ وہ ہم سے ہمارے خاندان کی عورتیں ان کے حوالے کر دینے کو بھی کہتے رہتے تھے۔

ان کی اہلیہ مینا کور نے کہا کہ نے کہا کہ وہاں ان کی بیٹیاں غیر محفوظ تھیں ۔آج ان کا کنبہ گوردوارے میں لنگرکھا کر خوش ہے انہیں اس بات کی بھی خوشی ہے کہ سرزمین ہند پر ہی ان موت ہو گی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Sikh families from afghanistan seek indian citizenship in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply