حکومت ہریانہ نے حساس علاقوں میں تعیناتی کے لیے مرکز سے نیم فوجی دستے بھیجنے کہا

چنڈی گڑھ:ملازمتوں اور تعلیمی اداروں میں جاٹوں کوریزرویشن دینے کا مطالبہ 72گھنٹے میں تسلیم نہ کیے جانے کی صورت میں تحریک دوبارہ شروع کر نے کی دھمکی ملنے کے بعد حکومت ہریانہ نے حساس مقامات پر تعینات کے لیے مرکز سے نیم فوجی دستے بھیجنے کی درخواست کی ہے۔
روہتک رینج کے پولس انسپکٹرجنرل سنجے کمار نے کہا کہ ریاستی وزارت داخلہ کے توسط سے مرکز سے نیم فوجی دستے بھیجنے کی درخواست کی گئی ہے۔انہوں نے کہا کہ ریاست کے اندر سے اضافی پولس فورس کا بھی بندوبست کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ ہم نے مناسب سیکورٹی بندوبست کیا ہے۔ اور جہاں جہان فورس تعینات کرنا ہے اتنی فورس ہمیں دستیاب ہے۔
تاہم انہوں نے یہ بتانے سے انکار کر دیا کہ اگر مطالبہ تسلیم کرنے کے لیے جمعرات کو72گھنٹے کی مہلت ختم ہونے کے بعد جاٹ لیڈروں نے ایجی ٹیشن شروع کر دیا تو امن و قانون برقرار رکھنے کے لیے کتنا پولس عملہ مطلوب ہوگا۔انہوں نے کہا کہ وہ سیکورٹی کے پیش نظر اس کا انکشاف نہیں کر سکتے۔واضح رہے کہ گذشتہ ماہ جاٹ ایجی ٹیشن کے دوران تشدد پر، جس میں 30افراد ہلاک ہوئے تھے، قابو پانے میں ناکامی پر ریاستی پولس پر کڑی تنقید کی گئی تھی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Security tightened across haryana in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply